بلوچستان کی مسافرکوچزمالکان کی پبلک ٹرانسپورٹ بند کرنے کی دھمکی

بلوچستان اور سندھ کے بارڈر پر کوسٹ گارڈ چیک پوسٹ کےخاتمےکامطالبہ

بلوچستان کی مسافر کوچز کے مالکان نے ملک بھر میں پبلک ٹرانسپورٹ بند کرنے کی دھمکی دے دی۔

پیر کو چمن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سندھ بلوچستان بس یونین کے صدر حاجی داد محمد اچکزئی اور دیگر مالکان نے مطالبہ کیا کہ  بلوچستان اور سندھ کے بارڈر پر واقع کوسٹ گارڈ چیک پوسٹ کو ختم کیا جائے۔

انھوں نے بتایا کہ کوئٹہ کراچی نیشنل ہائی وے پر وندر کے مقام پر کوسٹ گارڈ چیک پوسٹ پر مسافر بسوں میں سوار افراد کو بے جا تنگ کیا جاتا ہے اور چیکنگ کے نام پر بسوں کو کئی کئی گھنٹے غیر ضروری پر کھڑا کیا جاتا ہے۔

یہ بھی بتایا گیا کہ وندر کے مقام پر مسافر بسوں کے ٹنکی سے تیل تک نکال لیا جاتا ہے۔چیک پوسٹ پرخواتین اور بزرگوں کی تذلیل کی جاتی ہے۔ انھوں نےوزیراعلیٰ بلوچستان قدوس بزنجو سے اپیل کی کہ کوسٹ گارڈ چیک پوسٹ کو ختم کیا جائے۔

حاجی داد محمد اچکزئی نے مزید کہا گزشتہ روز ڈپٹی کمشنر لسبیلہ نے وندر کے مقام پر کوسٹ گارڈ چیک پوسٹ ختم کرنے کی یقین دہانی کروائی ہے اور اگر مطالبات نہ مانے گئے تو پھر ملک بھر میں مسافر کوچز کی سروس مکمل طورپر معطل کریں گے۔

Tabool ads will show in this div