اردوبولنےوالےہمارےبھائی ہیں،مہاجرکہہ کر لسانیت کوپھیلایاجارہاہے،ناصرشاہ

ملک میں تاریخی مہنگائی و بے روزگاری ہے
Dec 17, 2021

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/NASIR-SHAH-KHI-SOT-17-12.mp4"][/video]

سندھ کے صوبائی وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کچھ لوگوں کی سیاست ختم ہوچکی ہے اور وہ اس لئے مقامی حکومت کے نئے قانون کو سیاسی رنگ دے رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اردو بولنےوالےہمارے بھائی ہیں اور ان کو مہاجر کہہ کر لسانیت کو پھیلایا جا رہا ہے۔

جمعہ کو صوبائی وزیربلدیات سید ناصرحسین شاہ نے سندھ اسمبلی میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں تاریخی مہنگائی و بے روزگاری ہے جبکہ صنعتوں اور عام عوام کو تکلیف کا سامنا ہے۔

ناصرشاہ نے کہا کہ مقامی حکومت کا نیا قانون لائے ہیں۔ جن رہنماؤں کی سیاست ختم ہوچکی ہے وہ اس نئے قانون کو سیاسی رنگ دے رہے ہیں۔ مقامی حکومت کے نظام میں بہت بہتری ہے۔

حالیہ سیاسی بیانات پر صوبائی وزیرکا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو یا وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے جو کچھ کہا وہ مخالفین کے بیانات کے جواب میں کہا تھا۔جب ہم مخصوص ٹولے کو جواب دیتے ہیں تو وہ ان بیانات کو لسانیت کا رنگ دیتے ہیں۔اردو بولنےوالے ہمارے بھائی ہیں اوران کو مہاجر کہہ کر لسانیت کو پھیلایا جا رہا ہے۔ اُردو بولنے والوں کی بڑی قربانیاں ہیں۔

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیوایم ) سے متعلق پیپلزپارٹی کے رہنما نے کہا کہ ایم کیوایم نے جس قائد سے لاتعلقی کا اظہارکیا تھا ان کے عزائم واضع ہوچکے تھے۔ ایم کیو ایم کو چاہئے کہ اب ان کی جانب نہ جائیں۔ شہر کے حالات بڑی قربانیاں دے کر بہتر ہوئے اورآج ہم سکون میں ہیں۔

ناصر شاہ نے کہا کہ ملک اور صوبے کے لئے اس طرح کی باتیں مناسب نہیں ہیں۔تحریک انصاف کی دو صوبوں میں حکومت ہے جبکہ پنجاب اور خیبرپختونخوا کی مقامی حکومتوں کے قانون مختلف ہیں۔ پی ٹی آئی کیا کسی مشاورت سے پنجاب اور خیبرپختونخوامیں یہ آرڈیننس لے کر آئی ہے۔

Tabool ads will show in this div