لاہور:روشنائی گیٹ کی خوبصورتی اپنی مثال آپ ہے

رات کو دیے جلا کر روشن کردئیے جاتے تھے
Dec 16, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/Roshnai-Gate-Lhr-Pkg-16-12.mp4"][/video]

لاہور کے 12 دروازوں میں سے ایک دروازہ ایسا بھی ہے جو مغلیہ دور میں رات ہوتے ہی روشنیوں سے جگمگانے لگتا تھا۔

لاہور کی فوڈ اسٹریٹ کے نام سے پہچان رکھنے والا اندرون  شہرروشنائی گیٹ کا علاقہ جگ مگ کرتا رہتا ہے۔

اس بلند و بالا دروازے کو 400 سال قبل مغل بادشاہ شاہی گزرگاہ کے طور پر استعمال کرتے تھے اور یہاں رات کو دیے جلا کر روشن کردئیے جاتے تھے۔ دروازے کے اندر داخل ہوں تو بادشاہی مسجد کے دلفریب مناظردیکھنے سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ باہرنکلنے والوں کولکڑی کی روشن بالکنیاں اور جھروکےاپنی طرف متوجہ کرتے ہیں۔

خستہ حالی اور سیکیورٹی وجوہات کے باعث اس دروازے کو 10سال سیاحوں کے لئے بند رکھنے کے بعد اب  ہر خاص وعام کے لئے کھول دیا گیا ہے۔

دوردراز سے آنے والے اس روشن دروازے کو کھلا دیکھ کر خوشی کا اظہار کررہے ہیں۔ اس گیٹ کےاطراف میں  ثقافتی اشیاء کےاسٹالز بھی سجائے گئے ہیں۔

Tabool ads will show in this div