چنیوٹ:کروڑوں روپے کی دوا کمسن بچے کی زندگی بچانےکی امید بن گئی

شاویز پاکستان میں لائف لانگ ڈوز لینے والا اپنی نوعیت کا پہلا امیدوار بن گیا
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/The-Luckiest-Baby-Khi-Pkg-13-12-Ayaz.mp4"][/video]

چنیوٹ کا رہائشی بچہ قرعہ اندازی میں نام آنے کی وجہ سے جان لیوا مرض سے بچ گیا۔ ننھا شاویز پاکستان کا وہ پہلا خوش نصیب مریض تھا جس کو بین الاقوامی فارما سوٹیکل کمپنی نے 35 کروڑ روپے کی دوا کے ليے منتخب کیا۔

چنیوٹ کےرہائشی لیاقت علی غوری کو جب اپنے بیٹے کی مہلک بیماری کا پتہ چلا تو انہوں نے آغا خان یونیورسٹی اسپتال کراچی سے رجوع کیا جہاں اسپتال انتظامیہ کی مدد اوربین الاقوامی فارما سوٹیکل کمپنی کی معاونت سے شاویز پاکستان میں لائف لانگ ڈوز لینے والا اپنی نوعیت کا پہلا امیدوار بن گیا۔

شاویز کواس کی دوسری سالگرہ سے صرف ایک روز پہلے نئی زندگی مل گئی۔ شاویز پاکستان کا وہ اولین بچہ ہے جس کو قرعہ اندازی میں  جان لیوا مرض  اسپائنل مسکولر اٹرافی کے علاج  کے لیئے منتخب کیا گیا ہے۔

اسپائنل مسکولر اٹرافی موروثی بیماریوں کا ایک مجموعہ ہے جو ریڑھ کی ہڈی کے پٹھوں کولاغر کردیتا ہے۔ اس مرض میں مبتلا بچے بالعموم 2 سال سے زیادہ زندہ نہیں رہ پاتے۔

تحقیق کے مطابق دنیا بھرمیں پیدا ہونے والے ہر 10ہزار بچوں میں سے ایک  اسپائنل مسکولراٹرافی سے متاثر ہوتاہے۔عام طور پر کزن میرج  کرنے والے جوڑوں کے بچوں کے اس بیماری میں مبتلا ہونے کا خدشات زیادہ ہوتے ہیں۔

 سماء ٹی وی کو فیس بک، ٹویٹر اور انسٹاگرام پر فالو کریں اور یوٹیوب پر لائیو دیکھیں

RARE DISEASE

Tabool ads will show in this div