پنجاب یونیورسٹی میں ہنگامہ آرائی میں ملوث 8 طلبہ معطل

غنڈہ گردی کرنیوالوں سے رعایت نہیں برتی جائیگی، ترجمان
Dec 08, 2021
فائل فوٹو
فائل فوٹو

پنجاب یونیورسٹی انتظاميہ نے توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی ميں ملوث 8 طلبا کو معطل کردیا۔

پنجاب یونیورسٹی میں 3 دسمبر کو دو طلبہ تنظیموں کے درمیان جھگڑا ہوا، دونوں گروپوں نے ایک ایک دوسرے پر پتھراؤ کیا، ایک گروپ نے وی سی آفس کا گھیراؤ کیا اور توڑ پھوڑ بھی کی۔

واقعے کے بعد پنجاب یونیورسٹی نے جھگڑے اور توڑ پھوڑ میں ملوث طلبہ کیخلاف کارروائی کیلئے پولیس کو درخواست دی تھی۔ ترجمان پنجاب حکومت کا کہنا تھا کہ واقعے میں ملوث افراد کو گرفتار کیا جائے گا، اگر ملوث افراد طالبعلم ہوئے تو انہیں یونیورسٹی سے نکال دیا جائے گا۔

ترجمان پنجاب یونیورسٹی نے آج (بدھ کو) بتایا کہ کیمپس میں جھگڑا کرنیوالے افراد کا تعلق ايک طلبہ تنظيم سے ہے، دیگر طالبعلموں کی نشاندہی کے بعد 8 طالبعلموں کی معطلی کے احکامات جاری کردیئے گئے ہیں۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ طلباء کو معطل کرکے ڈسپلنری کمیٹی میں کیسز بھجوادئیے ہیں، غنڈہ گردی کرنیوالے عناصر سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔

ترجمان جامعہ پنجاب کا کہنا تھا کہ پنجاب یونیورسٹی کا امن و امان خراب کرنے والوں کے ساتھ نرمی نہیں کی جائے گی۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی پنجاب یونیورسٹی میں طلبہ میں تصادم کے واقعے کی تحقیقات کا حکم دیا تھا۔

Tabool ads will show in this div