ماں کا دودھ ترجیح بنانےکیلئے2002 کے آرڈیننس میں ترمیم کا مسودہ تیار

ڈبے پرلکھنا ہوگا کہ یہ ماں کے دودھ کا متبادل نہیں ہے

بچوں کی غذائیت کے مسائل  سے نمٹنے کیلئے وزارت صحت نے ماں کا دودھ ترجیح بنانے کیلئے 2002 کے آرڈیننس میں ترمیم کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔

سماء کو موصول دستاویز کے مطابق بازار میں دستیاب بچوں کے متبادل دودھ کے ڈبے پر دودھ کا لفظ نہیں لکھا جائےگا۔ ایسے ڈبے پرلکھنا ہوگا کہ یہ ماں کے دودھ کا متبادل نہیں ہے اور ڈبے پر لکھ کر ماں کے دودھ کی 2 سال تک اہمیت بتانا لازم ہوگا۔

نومولود کیلئے فارمولا دودھ کوصرف ڈاکٹر کی تجویز سے مشروط کرنا بھی ڈرافٹ میں شامل ہے جب کہ فارمولا دودھ کی دستیابی صرف فارمیسیز تک محدود کرنے کی بھی تجویز زیرِغور ہے۔ دودھ کا متبادل بنانے والی کمپنیوں کی سوشل میڈیا مارکیٹنگ پر بھی پابندی کی تجویز ہے۔

وزارت صحت کے مسودے میں بازار میں ملنے والے دودھ کے ڈبے پر ایسی کوئی تصویر نہیں لگے گی جو 6 ماہ تک کے بچے کو متبادل دودھ کی ترغیب دے اورلیبل پر یہ لکھنا بھی لازم ہوگا کہ یہ حلال ہے۔

بازار میں ملنے والے ڈبے کےدودھ کےمارکیٹنگ نمائندوں کے ہیلتھ کئیرسینٹرز میں داخلے پر پابندی کی بھی تجویز دی گئی ہے اوردودھ کی ترغیب دینے پر خرچ کرنا لازمی کرنے کی تجویز بھی دی گئی ہے۔ دودھ کا متبادل بنانے والی کمپنیوں کیلئے منافع کا 2 فیصد ماں کے دودھ کی افادیت اجاگر کرنے پر خرچ کرنا لازم ہوگا۔

POWDER MILK

Tabool ads will show in this div