آسٹریلوی ڈاکٹر کو آپریشنز کی ویڈیوز ٹک ٹاک پرڈالنے پرسزا

ہیلتھ ایجنسی کا سوشل میڈیا پوسٹس ہٹانے کا حکم

آسٹریلوی محکمہ صحت نے متنازع ڈاکٹر ڈینیئل لینزر پر ہر قسم کی پلاسٹک سرجری کرنے پر پابندی لگاتے ہوئے انہیں سزا سنادی، ساتھ ہی ان کی سوشل میڈیا پوسٹس کو ہٹانے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق آسٹریلین ہیلتھ پریکٹیشنرز ریگولیٹری ایجنسی (اے ایچ پی آر اے) نے ڈاکٹر ڈینیئل آرونوف کو آپریشنز کی ویڈیوز ٹک ٹاک پر اپ لوڈ کرنے پر سزا سناتے ہوئے آئندہ ہر قسم کی پلاسٹک سرجری سے روک دیا ہے، ان پر کچھ شرائط بھی عائد کی گئی ہیں۔

ڈاکٹر ڈینیئل سوشل میڈیا پر سب سے زیادہ فالو کئے جانیوالے پلاسٹک سرجن قرار دیئے جاتے ہیں، ان کے ٹک ٹاک پر ایک کروڑ 30 لاکھ سے زیادہ فالوورز تھے، ان کا اکاؤنٹ 2 ہفتے قبل اچانک ڈیلیٹ کردیا گیا تھا۔

آسٹریلیا کے اے بی سی نیٹ ورک کے مطابق ایک ماہ قبل متنازع ڈاکٹر کے حوالے سے صحافتی تحقیقات کی گئی تھیں جس میں لینزر کلینکس پر تشویشناک کارروائیوں کا الزام لگایا گیا، ان میں حفظان صحت اور حفاظت کی سنگین خلاف ورزیاں شامل ہیں۔

تحقیقات میں ڈاکٹر لینزر کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں بھی بتایا گیا جس سے مریضوں کو شدید درد کی شکایت ہوئی اور مزید طبی علاج کی ضرورت پڑی۔

حکام نے ڈینیئل ارونوف کو معمولی سرجریوں سمیت کاسمیٹک یا جراحی کے طریقۂ کار کو انجام دینے سے بھی منع کیا لیکن اسے اجازت دی کہ وہ جنرل پریکٹیشنر کے طور پر کام جاری رکھ سکیں گے۔

آسٹریلوی ہیلتھ ایجنسی نے متنازع ڈاکٹر پر سوشل میڈیا سے متعلق دیگر شرائط بھی عائد کی ہیں، جن میں شائع شدہ مواد یا پلاسٹک سرجری یا سرجری سے متعلق معلومات کو اس کے اکاؤنٹس سے ہٹانا شامل ہے۔

TIKTOK

Tabool ads will show in this div