اب یہ سورج اگلے سال ہی نکلے گا

اب سورج 22جنوری سال2022کوطلوع ہوگا
بشکریہ سی این این
بشکریہ سی این این
[caption id="attachment_2450238" align="alignnone" width="900"] بشکریہ سی این این[/caption]

کیا آپ کو معلوم ہے کہ دنیا میں کچھ حصے ایسے بھی ہیں، جہاں سورج کئی کئی دنوں نہیں بلکہ ہفتوں تک نظر نہیں آتا ہے۔

دنیا میں ایک ایسی جگہ بھی ہے، جہاں تقریباً 65 دن اندھیرا رہتا ہے۔ یہاں سال کے آخر میں سورج غائب ہوجاتا ہے۔ جہاں 65 دن تک لوگ سورج کو نہیں دیکھتے۔ جی ہاں یہ دن و رات کی کہانی امریکی ریاست الاسکا کے ایک علاقے کی ہے۔

امریکا کی ریاست الاسکا کا شہر "یٹکیا جیوک" جو "بیرو" کے نام سے بھی جانا جاتا تھا۔ جہاں 19 نومبر کو سورج غروب ہونے کے بعد اگلے سال 22 جنوری کو طلوع ہوگا۔ اس کے بعد ایک طویل رات کا آغاز ہو جائے جسے پولر نائٹ کہا جاتا ہے۔

ایک اندازے کے مطابق اس شہر کی کل آبادی 4 ہزار افراد پر مشتمل ہے۔

پولر نائٹ آرکٹک سرکل اور انٹارکٹیکا میں ہر سال موسمِ سرما میں آتی ہے، جس کی وجہ، عام الفاظ میں سمجھی جائے تو زمین سے سورج کی روشنی کا اس جگہ تک نہ آنا ہے، جب کہ اسی طرح گرمیوں میں سورج کہی مہینوں تک سورج کی روشنی برقرار رہتی ہے، جس کی وجہ سے اس خطے میں اندھیرا نہیں ہوتا ہے۔

اس عمل کو مڈنائٹ سن کہا جاتا ہے۔ امریکی چینل فاکس نیوز سے بات کرتے ہوئے ایک فوٹوگرافر نے بتایا کہ آج سے پولر نائٹ کا آغاز ہو رہا ہے۔ انہوں بتایا کہ آخری بار جب میں وہاں موجود تھا تو میں نے دیکھا کہ ان راتوں میں کرائم زیادہ بڑھ جاتا ہے، جبکہ لوگوں کو وقت کے حوالے سے غیر یقینی سی صورت حال رہتی ہے۔

SUN

POLAR NIGHT

Tabool ads will show in this div