افغانستان:طالبان نے جنرل عبدالرازق پولیس اکیڈمی کانام تبدیل کردیا

عبدالزاق کو مارنے والے طالب کے نام سےموسوم

افغانستان کے دوسرے بڑے شہر قندھار کے محکمہ اطلاعات و ثقافت نے نیشنل پولیس اکیڈمی کا نام جنرل عبدالرازق کے نام سے تبدیل کرکے ابو دجانہ نیشنل پولیس اکیڈمی رکھ دیا۔

افغان میڈیا کے مطابق ابو دجانہ وہ طالب جنگجو تھے جنہوں نے گورنر قندھار کے دفتر پر حملے کے دوران پولیس چیف جنرل عبدالرازق کو قتل کیا تھا۔

کم از کم ایک درجن قاتلانہ حملوں میں بچ جانے والے قندھار پولیس کے سربراہ جنرل عبدالرازق کو 18 اکتوبر 2018 کو طالبان کی جانب سے ایک حملے میں ہلاک ہوگئے تھے۔

جنرل عبدالرازق طالبان کے ساتھ پاکستان کے خلاف بھی انتہائی سخت موقف رکھنے کی وجہ سے مشہور تھے جن پر انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا بھی الزام تھا۔

افغان میڈیا کے مطابق جنرل رازق پاکستان اور افغانستان کے درمیان متنازع ڈیورنڈ لائن پر باڑ لگانے کے بھی سخت مخالف تھے۔

Afghanistan Taliban

Tabool ads will show in this div