یورپ:کرونا لہر، نیدرلینڈکےمریض جرمنی بھیجےجانےلگے

چند عالمی خبروں پر ایک نظر
Nov 24, 2021

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/11/WORLD-CHUNK-24-NOV-PKG-KAZIM-24-11.mp4"][/video]

مختلف یورپی ممالک کو کووڈ 19 کی خطرناک لہر کا سامنا ہے جبکہ نیدرلینڈ میں اسپتالوں میں جگہ کم پڑنے پر مریضوں کو جرمنی منتقل کیا جا رہا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق آسٹريا، رومانيہ، نيدرلينڈ اور جرمنی سميت يورپی ملکوں ميں کرونا کی خطرناک لہر کا دور دورہ ہے اور وہاں اسپتال مریضوں سے بھر گئے ہیں۔

نیدرلينڈ کے اسپتالوں کی صورتحال تو اتنی گمبھیر ہوگئی ہے کہ وہاں سے مریضوں کو جرمنی لے جایا جا رہا ہے۔

آسٹريا ميں مکمل لاک ڈاؤن جاری ہے جبکہ ديگر ممالک نئے اقدامات پر غور کررہے ہيں جن ميں کرسمس تقريبات اور نيوايئر نائٹ پر ہلہ گلہ کرنے پر پابندياں شامل ہيں۔

دریں اثناء عالمی ادارہ صحت نے يورپ سميت ايشيائی ممالک تاجکستان اور ازبکستان ميں مارچ 2022 تک کرونا سے مزيد 7 لاکھ افراد کے ہلاک ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

میراڈونا کی دل کے بغیرتدفین کی گئی تھی

ليجنڈری فٹبالر ميراڈونا کے حوالے سے انکشاف کیا گیا ہے کہ جب ان کی تدفین ہوئی تو ان کے سینے میں دل نہیں تھا۔

ارجنٹینا سے تعلق رکھنےوالے ڈاکٹر اور صحافی نیلسن کاسترو نے ميراڈونا سے متعلق اپنی کتاب ميں لکھا ہے کہ ڈاکٹرز نے میراڈونا کی موت کی تحقيقات کے لیے ان کا دل نکال لیا تھا۔ عام طور سے دل کا وزن 300 گرام ہوتا ہے مگر مشہور فٹبالر کا دل 500 گرام وزنی تھا۔

COVID NEWS

Tabool ads will show in this div