بلغاریہ:بس میں آتشزدگی،12بچوں سمیت45 افراد جاں بحق

بس سیاحوں کو واپس ترکی لےجارہی تھی

ترک شہر استنبول سے ویک اینڈ پر سیاحوں کو واپس لانے والی مسافر بس میں مغربی بلغاریہ میں آگ لگنے سے 12 بچوں سمیت 45 افراد جھلس کر جاں بحق ہوگئے۔

بلغاریہ کے حکام کا کہنا ہے کہ حادثہ صوفیہ سے 30 کلومیٹر کی مسافت پر پیش آیا۔ بس میں آگ اس وقت لگی جب وہ سڑک پر کھڑی ایک رکاوٹ سے ٹکرائی تھی جبکہ جلتی بس سے چھلانگ لگا کر زندہ بچ جانے والے 7 افراد کو بلغاریہ کے دارالحکومت صوفیہ کے اسپتال پہنچا دیا گیا ہے۔

حادثے کا شکار ہونے والی بس استنبول سے 800 کلومیٹر کا فاصلہ طے کر کے واپس شمالی مقدونیہ کے دارالحکومت اسکوپیے جا رہی تھی جس میں اسکول کے بچے اور ان کے والدین سوار تھے۔

بلغاریہ کی وزارت داخلہ نے اپنے ملک میں بس میں آگ لگنے اور ہلاکتوں کو سب سے بڑا حادثہ قرار دیا ہے۔

بلغاریہ کے عبوری نائب وزیر داخلہ بوئکو رشکوف کا کہنا ہے کہ بس کے اندر موجود تمام افراد کی نعشیں جل کر خاکستر ہو گئی تھیں۔ انہوں نے حادثے کے مقام کا دورہ کرنے کے بعد بتایا کہ بس کے مناظر انتہائی خوفناک تھے۔ رشکوف کے مطابق انہوں نے اپنی زندگی میں پہلے کبھی اتنا خوفناک منظر نہیں دیکھا۔

Macedonia traffic accident

Tabool ads will show in this div