قصور: ملزمہ پر تشدد،سب انسپکٹر،لیڈی کانسٹیبل معطل

تشدد کی ویڈیو بھی بنائی گئی
Nov 22, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/11/Kasur-bpr.mp4"][/video]

رپورٹ: مہر محمد شفیق

قصور میں پولیس تھانے میں ایک پولیس اہلکاروں نے ایک سولین خاتون کے ذریعے ایک ملزمہ پر تشدد کا نشانہ بنایا۔

پولیس کے مطابق تھانہ صدر میں کچھ خواتین قتل اور ڈکیتی میں معاونت کے الزام میں لائی گئی تھیں جن میں سے ایک ملزمہ پر تشدد کرنے والی خاتون پولیس والی بھی نہیں تھی جبکہ اس واقعے کی ویڈیو ریکارڈنگ بھی کی جاتی رہی۔

سب انسپکٹر حیدر علی نے مبینہ طور پر ایک ساجدہ بی بی نامی ایک خاتون کو بلا کر لیڈی کانسٹیبل عائشہ کے ساتھ لاک اپ میں بھیجا ا اور خاتون ملزمہ پر تشدد کروایا۔ اس تشدد کے دوران ملزمہ کا 4 سالہ بیٹا بھی وہیں موجود اپنی ماں کو پٹتا دیکھ رہا تھا۔

اس معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او قصور نے تشدد کروانے والی لیڈی کانسٹیبل عائشہ اور سب انسپکٹر حیدر علی کو معطل کردیا۔ ملزمہ کی پٹائی کرنے والی ساجدہ بی بی کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

Toruture

Lady Constable

Tabool ads will show in this div