ڈرامہ پری زاد: ٹوٹے دل سے ہی سنگیت نکلتا ہے

ڈرامے کے ڈائیلاگز شائقین میں بے حد مقبول ہورہے ہیں
Nov 29, 2021

ان دنوں سب سے مقبول پاکستانی ڈرامہ سیریل ’پری زاد‘ نے ڈرامہ شائقین کے دلوں میں جگہ بنارکھی ہے یہ ڈرامہ عام طور پر نشر کئے جانے والے ڈراموں سے مختلف ہے اس ڈرامہ میں بہترین ڈائیلاگز کے ذریعے معاشرے کے کئی پہلوؤں کو اُجاگر کیا گیا ہے۔

ڈرامے کا مرکزی کردار ’پری زاد‘ اداکار احمد علی اکبر نے نبھایا ہے اور یہ کہا جائے تو غلط نہ ہوگا کہ احمد علی اکبر کی منفرد اداکاری نے ڈرامے میں جان ڈال دی ہے یہی وجہ ہے کہ یہ ڈرامہ سوشل میڈیا پر ریٹنگ کے تمام ریکارڈز بھی ایک ایک کرکے توڑ رہا ہے۔

ڈرامے کے مقبول ہونے کی ایک اہم وجہ یہ بھی ہے کہ ڈرامہ کی کہانی کسی ایک سمت نہیں بلکہ گزرتے لمحات کے ساتھ جس طرح ایک عام انسان کی زندگی کروٹیں بدلتی ہے اسی طرح ڈرامہ کے اہم کردار کی زندگی کو حقیقی رنگ دیا گیا ہے، عام طور پر ڈراموں میں زندگی کے مخصوص مقصد کے حصول کو دکھایا جاتا ہے۔

ہم ٹی وی پر نشر ہونے والے ڈرامہ سیریل ’پری زاد‘ کے مصنف اور ڈرامہ نگار ہاشم ندیم ہیں، جو اس سے قبل ’رقصِ بسمل‘ اور ’خدا اور محبت‘ جیسے ڈرامے لکھ چکے ہیں۔ اس ڈرامے کی ہدایات شہزاد کشمیری نے دی ہیں جو اس سے پہلے شہرہ آفاق ڈرامہ سیریل ’ہمسفر‘ میں بحثیت سنیمیٹوگرافر کام کرچکے ہیں۔

ڈرامے میں احمد علی اکبر، مشال خان، صبور علی ، اُشنا شاہ اور عروہ حسین کے علاوہ ڈرامہ سیریل پری زاد میں نعمان اعجاز کے کردار کو بھی بے حد سراہا گیا۔ ڈرامے کی کہانی سانولے رنگ کے شخص پری زاد کے گرد گھومتی ہے جو بہت ذہین، شریف النفس اور سوچ و فکر رکھنے والا ہے لیکن بے رحم زمانے کے طنز و تعنے کو برادشت کرنے اور اپنی احساس محرومی کا مقابلہ کرنے کیلئے الفاظ کی شطرنج کھیلتا ہے ۔

ایک ڈائیلاگ کچھ یوں ہے کہ : شکل و صورت انسان کا پہلا تعارف ہے ۔۔۔ انسان کا دوسرا اور اصل تعارف اس کے الفاظ ہیں

ڈرامہ کی کہانی کچھ یوں ہے کہ پری زاد کو اس کے نام اور رنگ کی وجہ سے بچپن ہی سے تمسخر کا نشانا بنایا جاتا یہ سلسلہ اس کے زندگی کے ساتھ ساتھ چلتا رہتا ہے، پری زاد کے والدین اس کے بچپن ہی میں انتقال کرگئے تھے، بھائیوں اور بھابھیوں سے اسے محبت نہ مل سکی اور نہ انہوں نے اس کی کفالت کی ذمہ داری لی، اس لیے وہ اخراجات پورے کرنے کے لیے ٹیوشن پڑھاتا ہے اور گھر میں خرچہ بھی دیتا ہے۔

ایک ڈیلاگ تھا کہ : لفظوں کی سلطنت کے بادشاہ بن جاو ۔۔۔ پھر دیکھو کون کون تمھارے قدموں میں ہوگا

پری زاد سے اگر کوئی واقعی محبت کرتا ہے تو وہ اس کی بہن ہے ، لیکن وقت کے ساتھ ساتھ اس کی سادہ دلی، نیک نیتی اور وفا پرستی کئی لوگوں کا دل جیت لیتی ہے پری زاد اپنی وفا پرستی سے لوگوں کو خرید لیتا ہے ۔

ڈرامہ خدا اور محبت 3 کا اختتام کیسا ہوگا؟

پری زاد کی رحم دلی سے اسے کئی نقصانات بھی اٹھانے پڑے لیکن وہ پھر بھی یاروں کا یار ثابت ہوا اور اس نے اپنی اعلیٰ ظرفی سے زمانے کی اس حقیقت کا مقابلہ کیا کہ صرف پیسوں سے ہی سب کچھ نہیں خریدا جاسکتا ہے کیونکہ کہانی میں معاشرے کی تلخ حقیقت کو دکھایا گیا کہ لوگ انسان کے کردار کی نہیں اس کے رتبے کی عزت کرتے ہیں اور پری زاد بھی یہ راز سمجھ جاتا ہے کہ بس پیسہ کمانا ہے کیونکہ پیسوں کے آگے سب جھکتے ہیں ۔

ایک ڈائیلاگ یہ ہے : خود کو اتنا امیر کرو کہ ۔۔۔ جو تمھاری شخصیت کے عیب ہیں دنیا کو اسٹائل لگنے لگیں

ڈرامے کی کہانی میں راجا تو ایک ہے لیکن رانیاں کئی ہیں جن کی الگ الگ کہانی ہے جو کہانی میں ہر دوسرے لمحے تجسس پیدا کرتی ہے لیکن ایک بات جو راجا اور رانیوں کی زندگی میں مشترک ہے کہ وہ یہ کہ سب کہیں نہ کہیں معاشرے کے کسی قدغن کا شکار ہیں لیکن اسی میں چند خواتین کرادر کو ایسا بھی پیش کیا گیا کہ جو زمانے میں مردوں کے شانہ بہ شانہ نظر آتی ہیں ۔

اس ڈرامے میں جہاں اردو شاعری کا کمال استعمال کیا گیا ہے وہیں اس کے ساتھ ساتھ معروف شاعر حبیب جالب ، جون ایلیا ، فیض احمد فیض ، احمد فراز اور محسن نقوی کا ذکر بھی سننے کو ملا ۔

ایک ڈائیلاگ : غریب کی شاعری بھی دنیا کو فصول لگتی ہے لیکن بندہ امیر ہو تو اس کے منہ سے نکلی ہوئی گالی بھی شاعری لگتی ہے۔

زندگی کی اونچ نیچ سختی نرمی انسان کے فن کو بھی ریزہ ریزہ کردیتی ہے اگرچہ پیسوں سے زمانے میں جہاں ہر چیز خریدی نہیں جاسکتی ہے لیکن مجبوری انسان سے بڑے بڑے کام کروالیتی ہے ۔

گزشتہ ہفتے نشر کی گئی قسط میں یہ دکھایا گیا پیسہ آنے کے بعد لوگوں کا رویہ کیسے تبدیل ہوجاتا ہے لیکن اس کے باوجود خلوص،وفا پرست، محبت، صلہ رحمی کرنے والوں کی بھی کمی نہیں ہے ۔

پری زاد زمانے کے ناروا سلوک کا مقابلہ اپنے الفاظ سے کرتا ہے لوگ اس کے جملوں سے متاثر ہوجاتے ہیں جو دراصل اس کے زندگی کے تلخ تجربات اسے سیکھاتے ہیں جسے دیکھ کر ایک بالی ووڈ فلم راک اسٹار کا ڈائیلاگ یاد آتا ہے کہ ' ٹوٹے دل سے ہی سنگیت نکلتا ہے' ۔

PARIZAAD

EPISODE 19

LATEST EPISODE

parizad

parizad drama

parizad drama cast

parizad drama review

Tabool ads will show in this div