گوجرانوالہ:13سالہ طالبعلم ریپ کےبعدقتل،ماں کی خودکشی کی دھمکی

جلد انصاف کی فراہمی کیلئے اہلخانہ کا احتجاج
Nov 18, 2021

گوجرانوالہ میں بدفعلی کے بعد قتل ہونے والے نویں جماعت کے طالبعلم کے اہلخانہ نے ملزمان کی گرفتاری اور انہیں کیفر کردار تک پہنچائے جانے کے لیے احتجاج کیا جبکہ بیٹے کے غم میں نڈھال ماں نے خودکشی کی دھمکی دے دی۔

گوجرانوالہ ميں نويں جماعت کے طالب علم کے بدفعلی اور قتل کو چوبيس روز گزر جانے کے باوجود اہلخانہ انصاف کےمنتظر ہیں۔

پسرور روڈ پر قاتلوں کی گرفتاری کے لیے کیے گئے احتجاج کے دوران غم سے نڈھال ماں کا کہنا تھا کہ اگر قاتلوں کو سزا نہ ملی تو وہ خود پر تیل چھڑک کر اپنی جان دے دیں گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کے بیٹے کو گلی کا ایک لڑکا اغوا کرکے اپنے ساتھ لےگيا تھا اور 2 دن بعد بچے کی لاش ملی۔

مقتول کی خالہ نے بتایا کہ وہ لو گ پوليس کے پاس چکر کاٹتے ہیں لیکن کوئی ان سے تعاون نہيں کررہا۔ انہوں نے کہا کہ ہميں انصاف چاہيے قاتلوں کو سر عام سزائے موت دی جائے۔

تيرہ سالہ لڑکے کی 25 اکتوبر کو اپرچناب نہر کے قريب سے لاش ملی تھی جس کا مقدمہ تھانہ سيٹلائٹ ٹاؤن ميں درج کروایا گیا۔

پوليس کا کہنا ہے کہ زير حراست 3 ملزمان سے تفتيش جاری ہے جبکہ فرانزک رپورٹ کے بعد مزيد کارروائی کی گائے گی۔

Rape and Murder

murder victim

Tabool ads will show in this div