اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر مزید مہنگا ہوگیا

ڈالر کی قدر بڑھنے کا تسلسل 9ویں روز بھی برقرار رہا 
Nov 18, 2021

اوپن کرنسی مارکیٹ میں امریکی ڈالر 178روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

بینکوں میں ہفتہ وار تعطیل کے باعث ہفتہ کو انٹر بینک مارکیٹ میں کرنسیوں کی لین دین بند رہی جبکہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں کرنسیوں کی خرید وفروخت معمول کے مطابق جاری رہی اور اس دوران ڈالر کی قدر بڑھنے کا سلسلہ برقرار رہا۔

فاریکس ایسوسی ایشن سے جاری رپورٹ کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ایک ڈالر مزید 20 پیسے کے اضافے سے 178 روپے کا ہوگیا جو ملکی تاریخ کی ایک اور بلند ترین سطح ہے، اس سے قبل جمعہ کو انٹر بینک میں بھی ڈالر 175.80 روپے کا ہوگیا تھا۔

واضح رہے کہ 4 نومبر سے پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور 3 نومبر کو انٹر بینک میں 169.75 ڈالر روپے جبکہ اوپن مارکیٹ میں 170.70روپے کی سطح پر تھا جو بڑھتے ہوئے تدریجاً اب تک 9 روز میں اوپن کرنسی مارکیٹ میں 7.30 روپے مہنگا ہوچکا ہے جبکہ انٹر بینک میں بھی 7 روز کے دوران ڈالر کی قدر میں 6.05 روپے اضافہ ہوچکا ہے۔

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف مذاکرات کی تاحال بحالی نہ ہونے سے ڈالر کی قدر میں پھر سے اضافہ ہو رہا ہے اور جب تک آئی ایم ایف مذاکرات کے حوالے سے کوئی مثبت نتیجہ سامنے نہیں آتا تب تک روپے پر دباؤ برقرار رہے گا۔

سیکریٹری ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن ظفر پراچہ کے مطابق سعودی امداد کے اعلان کے بعد روپے کی قدر میں کچھ اضافہ ہوا تاہم سعودی امداد تاحال نہیں مل سکی جس سے روپے پر دباؤ بڑھتا جارہا ہے اور ڈالر کی قیمت دن بدن بڑھ رہی ہے۔

currency rate

Tabool ads will show in this div