شکست کے بعد بابراعظم نے ٹیم سے کیا کہا؟

کوئی کسی کوکھینچےگانہیں،ایک دوسرے کو اٹھاو

ٹی 20 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں آسٹریلیا سے شکست کے بعد قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم نے ڈریسنگ روم میں کھلاڑیوں کا حوصلہ بلند کیا۔

پی سی بی کی جانب سے شیئرکی جانے والی ویڈیومیں بابراعظم نے ایک میچ میں شکست سے فائنل میں جانے کی محرومی پرافسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا جو یونٹ بنا ہوا ہے یہ نہ ٹوٹے، نہ ہی کوئی کسی (دوسرے کھلاڑی) پرانگلی اٹھائے کہ بطورٹیم ہم نے اچھا نہیں کھیلا'۔

میچ کے بعد دل شکستہ کھلاڑیوں سے خطاب میں بابرکا کہنا تھا کہ 'سبھی کو دکھ ہے کہ ہم نے کہاں غلط کیا اورکہاں اچھا کرنا چاہیے تھا۔ ہم ایک میچ ہارے اور فائنل میں جانے سے رہ گئے، ہم ہار سے سیکھیں گے اورآئندہ یہ غلطیاں نہیں دہرائیں گے'۔

بابر اعظم کے مطابق، ' میں بطورکپتان تمام کھلاڑیوں کی حمایت کرتا ہوں، فیملی والا ماحول رکھا سب سے، ہرکھلاڑی نے ہرمیچ میں ذمہ داری لی ہے اور ایک ٹیم سے یہی چاہیے ہوتا ہے۔ ہمارے ہاتھ میں کوشش ہے لیکن نتیجہ نہیں تو کوشش اچھی کریں اور گریں نہیں، ایک دوسرے کو اٹھائیں۔ کسی نے کسی کو کھینچنا نہیں ہے۔ اس شکست سے بہت کچھ سیکھا ہے۔ ٹیم کا اتحاد قائم رہنا چاہیے'۔

بیٹنگ کنسلٹنٹ میتھیو ہیڈن نے تمام کھلاڑیوں پر فخرکا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ٹیم نے بہت ہمت کا مظاہرہ کیا ہے، پلیز اپنے سر بلند ہی رکھیں کیونکہ یہ تکلیف عارضی ہے۔ ہمیں انفرادی اوراجتماعی طور پرکئی چیزوں پرکام کرنا ہے۔

بولنگ کنسلٹنٹ ویرن فلینڈرنےبھی کھلاڑیوں کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ سب کو آج کا سبق یاد رکھنا ہوگا۔

عبوری ہیڈ کوچ ثقلین مشتاق نے بھی ٹیم کو حوصلہ بڑھاتے ہوئے کہا کہ اب سیکھنا ہے جس سے مراد ہے کہ تم لوگوں کی دوستی میں اور دوستی ہوجائے ۔ وِن اور لوز یہ لفظ کسی نے ایسے ہی بنا دیا ہے، یہ 'وِن اینڈ لرن' ہونا چاہیے۔ جو اچھی باتیں سیکھیں اسے آگے شیئرکرو، شکست بھی گیم کا حصہ ہے۔

ایونٹ کے دوسرےسیمی فائںل میں آسٹریلیا نے سنسنی خیزمقابلے میں پاکستان کو 5 وکٹوں سے شکست دے کرفائنل میں جگہ بنائی۔ فائنل میچ اتوار 14 نومبر کو دبئی میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلا جائے گا۔