امریکا کی اولین جنگ اب کس کے خلاف؟

جو بائیڈن حالات پر جلد قابو پانےکیلئے پرامید
Nov 11, 2021
[caption id="attachment_2426633" align="alignnone" width="800"]Joe Biden فوٹو: اے ایف پی[/caption]

امريکا ميں مہنگائی کا 30 سالہ ريکارڈ ٹوٹ جانے کے پیش نظر صدر جو بائيڈن نے مہنگائی کے خلاف جنگ کو اولين ترجيح قرار دے ديا۔

ایک سروے کے مطابق کووڈ ويکسين ميں کمی اور سپلائی چينز متاثر ہونے سے امريکا مہنگائي کے دلدل ميں پھنسا۔ کھانے پينے کی چيزوں کے دام 6 اعشاريہ 2 فيصد بڑھ گئے۔

تیل سميت گاڑیوں اور گھروں کی قیمتيں 30 سال کی بلند ترین سطح پر جا پہنچيں۔ ہوش ربا مہنگائی کی خبروں نے امريکی منڈيوں پر بھی برا اثر ڈالا ۔ ڈاؤ جونز سميت نيسڈيک اور ايس اينڈ پی ميں شديد مندی ديکھی گئی۔ امريکي صدر جو بائیڈن نےمہنگائی کے خلاف جنگ کو اول ترجیح قرار ديا تاہم اُميد ظاہر کی کہ مہنگائی کی حاليہ لہر عارضی ثابت ہوگی اور اضافی قيمتوں پر جلد قابو پاليا جائے گا۔

UNITED STATES

Tabool ads will show in this div