بھینسوں کیلئےعجوہ کھجور کا تحفہ لیکن ساتھ کڑی شرط بھی

کراچی کے ایک ڈیری فارم میں مویشیوں کےمزے
Nov 10, 2021

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/11/Bhens-khajoor.mp4"][/video]

عجوہ  اور عنبر حجاز مقدس کی سب سے اچھی سوغات سمجھی جاتی ہیں جو خاصی گراں قیمت بھی ہیں لیکن ایک دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ قیمتی کھجوریں کراچی کی  گائیں بھینسیں بھی کھا رہی ہیں اور روزانہ ایک دو کلو نہیں بلکہ پورے 80 کلو۔

کراچی کی  بھینس کالونی کے ڈیری فارمر محمد شوکت اپنے جانوروں سے بہت محبت کرتے ہیں جس کو دیکھتے ہوئے ان کے ایک دوست نے انہیں بھاری مقدار میں عجوہ  اور عنبر بھجوائیں لیکن اس کے ساتھ ہی انہوں نے ایک شرط بھی رکھ دی جو یہ تھی کہ یہ کھجوریں صرف یہ جانور کھائیں گے، انہیں نہ تو فروخت کیا جائے گا اور نہ ہی فارم ہاؤس سے باہر لے جایا جائے گا۔

محمد شوکت کا کہنا ہے کہ روزانہ 80 کلو عجوہ اور عنبر  کھانے سے بھینسوں کی صحت بھی بہتر ہوئی ہے. حجاز مقدس کی کھجوریں کھانے سے  دودھ کا معیار بھی اتنا بلند ہوگیا ہے کہ  لوگ دور دور سے شوکت کے پاس پہنچتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جب سے بھینسیں یہ کھجوریں کھا رہی ہیں ان کی خوبصورتی بڑھ گئی ہے اور جو بیمار بھینسیں تھی وہ بھی تندرست ہوگئی ہیں۔

مگر بھینسوں کی عجوہ اور عنبر سے روزانہ تواضع کرنا  اتنا آسان نہیں ہے اور اس کے لیے ڈیری  فارم ملازمین کو کئی گھنٹے تک محنت کرنی پڑتی ہے کیوں کہ وہ تمام کھجوروں  سے گٹھلی علیحدہ کرتے ہیں اور پھر خوراک میں ملاتے ہیں۔

بھینس کالونی میں انجیکشن کے ذریعے جانوروں سے دودھ حاصل کیا جاتا ہے جو انتہائی مضرصحت ہوتا ہے مگر محمد شوکت کا دعویٰ ہے کہ ان کے دودھ میں نہ تو پانی شامل ہے اور نہ ہی جانوروں کو دودھ بڑھانے کے لیے ٹیکے لگائے جاتے ہیں۔

کراچی میں آج کل خالص دودھ کا ملنا تقریباً نا ممکن ہوچکا ہے لیکن عجوہ اور عنبر کھانے والی ان گائیوں اور بھینسوں کا دودھ خوشبودار بھی ہے اور مزے دار بھی۔

cattle farm

karachi cattle market

Tabool ads will show in this div