حسن ابدال:شمسی تالاب میں چاندکی چودہویں شب نظر آنےوالی جل پری

اس حسین مچھلی کی ناک میں سونےکی نتھ ہوتی ہے

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/11/King-Babars-Fishes-Isb-Pkg-31-10.mp4"][/video]

 

حسن ابدال میں پنجہ صاحب کے سامنے واقع قدیم شمسی تالاب میں بڑی بڑی اور حسین مچھلیاں پائی جاتی ہیں جن سے ایک دیو مالائی کہانی بھی جڑی ہے جس کے مطابق چاند کی چودہویں شب کو اگر جمعرات ہو تو سونے کی نتھ  پہنے ایک مچھلی نظر آتی ہے جو اصل میں ایک خوبصورت عورت تھی لیکن مچھلی بن گئی تھی۔

یہ تالاب مغل بادشاہ بابر کے وزراء نے بنوایا تھا لیکن اس کی وجہ شہرت اور یہاں آنے والے سیاحوں کی تلاش ایک قدیم طلسماتی روایت سے جڑی ہے۔ اس بات کا تذکرہ مغل بادشاہ ظہیر الدین بابر نے بھی اپنی سوانح تزک بابری میں کیا ہے۔

نتھ والی مچھلی کے بارے میں پرانے زمانے سے ایک بات چلی آ رہی ہے کہ یہاں ایک مچھلی ہے جو عورت سے مچھلی بنی  اور اس کی ناک میں سونے کی نتھ ہے۔ تاہم یہ نظر اس صورت میں ہی آتی ہے جب چاند کی چودھویں رات ہو اور اس دن جمعرات پڑ رہی ہو۔

شمسی تالاب میں مقبرہ حکیماں کا جھلملاتا عکس اور اس کی اوٹ میں صدیوں سے آباد آبی زندگی میں  بوڑھے کچھوے اور نٹ کھٹ مچھلیاں اٹکھیلیاں کرتی دکھائی دیتی ہیں لیکن لوگوں کی متجسس نگاہیں اس نایاب مچھلی کو ہی ڈھونڈتی ہیں۔ لوگوں کے مطابق اس جگہ 10 اور 15 کلو سے زیادہ وزنی مچھلییاں بھی دیکھی گئی ہیں۔

شمسی تالاب کی سیڑھیوں پر لوگ منتیں مرادیں مان کر مچھلیوں کے لیے پانی میں کھانا ڈالتے ہیں لیکن نتھلی والی مچھلی دیکھنے کا دعویٰ ان میں سے ابھی تک کوئی بھی نہیں کرسکا۔

Hasan Abadal

Shamsi Pond

Tabool ads will show in this div