کیا آپ نےگلگت میں بلند چٹان پرموجود بدھا کا قدیم مجسمہ دیکھاہے؟

جانیے شاندار محسمے کی مختصر تاریخ
Oct 29, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Gilgit-Budha-Pkg-28-10-ZOHAIB.mp4"][/video]

تحریر منظر شگری

گلگت جانے والے افراد نے وہاں موجود مہاتما گوتم بدھ کا مجسمہ ضرور دیکھا ہوگا لیکن اس کی تاریخ سے شائد بہت کم لوگ واقف ہوں۔

گلگت کے مغربی پہاڑوں کی چٹان پر کارگاہ کے مقام پر بدھا کا مجسمہ تقریباً 2 ہزار برس قبل بدھ مت کے پیروکاروں نے بنایا تھا۔ اس مقام پر بہتے شفاف پانی کا چشمہ يہاں زندگی کا احساس دلاتا ہے۔

چوتھی صدی عیسوی میں بنے اس مجسمے کو مقامی لوگ اسے یشینی کےنام سے پکارتے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ یہاں جب بدھ مت آیا تو اس کےپیروکاروں نے بلند چٹان پر مہارت کے ساتھ بدھا کا یہ مجسمہ بنادیا۔

بدھ مت مذہب کے لوگوں کا ماننا ہے کہ بدھا کے سينے پر ان کے ایک ہاتھ کا موجود ہونا امن کا پیغام ديتا ہے۔

مقامی اور غيرملکی سياح يہاں کا رخ تو کرتے ہيں ليکن ان کی تعداد کچھ ایسی زیادہ نہیں ہوتی۔اس قدیم مجسمے کو محفوظ بنانے کے اقدامات کے ساتھ ساتھ اگر حکومت یہاں سیاحوں کے لیے مزید سہولیات کی فراہمی بھی یقینی بنائے تو یہ صدیوں پرانی تاریخ کے بارے میں آگاہی بڑھانے میں معاون ثابت ہوسکتا ہے۔

GILGIT BALTISTAN

Buddha statue

Tabool ads will show in this div