فہد مصطفیٰ کاوقاریونس پرتنقید کرنےوالے بھارتی کمنٹیٹرکوکراراجواب

وقاریونس'نماز'سےمتعلق تبصرے پرمعافی مانگ چکےہیں

فہد مصطفیٰ نے سابق کرکٹ کپتان وبالنگ کوچ وقار یونس کے بیان پرتنقید کرنے والے بھارتی کمنٹیٹر ہرشا بھوگلے کوآڑے ہاتھوں لے لیا، ہرشا نے وقار سے معافی مانگنے کا مطالبہ کیا تھا۔

ٹی 20ورلڈ کپ میں اتوار کو روایتی حریفوں پاکستان اور بھارت کے میچ کے دوران محمد رضوان نے دوران کھیل ہی گراونڈ میں نماز ادا کی تھی، پاکستان کی تاریخی فتح کے بعد کاشف عباسی کے شومیں بطور مہمان شریک وقار یونس نے اس حوالے سے تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ' میچ کی سب سے اچھی بات جو رضوان نے کی کہ اس نے گراونڈ میں ہندوؤں کے بیچ میں کھڑے ہو کرنمازپڑھی، میرے لیے یہ بہت اسپیشل تھا'۔

وقار یونس کا یہ بیان سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد بیشترصارفین نے اسے 'فرقہ واریت' قراردیتے ہوئے سابق فاسٹ بالر پرکھیل میں مذہب کو لانے کا الزام عائد کیا۔

تنقید کرنے والوں میں ہرشا بھوگلے بھی شامل تھے جن کا کہنا تھا کہ وقارکے الفاظ سننے میں انتہائی ' بھیانک' تھے۔

بھارتی کمنٹیٹرنے اپنی ٹویٹ میں لکھا، 'وقار یونس جیسے شخص سے یہ سننا کہ رضوان کو ہندوؤں کے سامنے نماز پڑھتے دیکھنا ان کے لیے بہت خاص تھا، سب سے زیادہ مایوس کن بات ہے ۔ ہم میں سے بہت سے لوگ اس طرح کی چیزیں کم کرنے اورکھیلوں کے بارے میں بات کرنے کی پوری کوشش کرتے ہیں اور پھر ایسا سننا انتہائی بھیانک ہے'۔

ہرشا کے مطابق کرکٹرز اپنے کھیل کے برانڈ ایمبیسیڈر ہیں، اس لیے انہیں زیادہ ذمہ دار ہونا چاہیے۔

اس تبصرے کو ری ٹویٹ کرنے والے پاکستانی اداکارفہد مصطفیٰ نے بھارتی کمنٹیٹرکوتصویرکا دوسرا رخ دکھاتے ہوئے بالی ووڈ میں مسلمانوں کی منفی منظرکشی کی جانب توجہ دلائی۔

فہد نے اپنے جواب میں لکھا، 'یہ دیکھنا بھی اتنا ہی مشکل ہے کہ طویل عرصے سے بالی ووڈ کی تقریباً ہرفلم میں مسلمانوں کو دہشتگرد کے طور پرپیش کیا جائے۔ میں سوچ بھی نہیں سکتا کہ بھارت میں بسنے والے مسلمانوں کے لیے یہ کتنا مشکل اورباعث شرمندگی ہوگا کہ وہ اس طرح سے اپنا مذاق اڑتے ہوئے دیکھیں'۔

اداکار نے اپنی ٹویٹ میں ہیش ٹیگ کے ساتھ 'منافقت بند کرو' بھی لکھا۔

دوران کھیل رضوان کی جانب سے نماز کی ادائیگی کو سراہنے والے وقاریونس نے بھی اپنے بیان پر معذرت کرتے ہوئے اپنے الفاظ کو'غیرارادی' قراردیا ہے۔

وقاریونس نے اپنی ٹویٹ میں لکھا، 'پُرجوش لمحات میں، میں غیرارادی طور پرکچھ ایسے الفاظ کہہ گیا جن سے لوگوں کے جذبات مجروح کرنا میرا مقصد ہرگزنہیں تھا۔ میں اس کے لیے معذرت خواہ ہوں، یہ ایک غلطی تھی'۔

سابق کوچ نے مزید کہا کہ کھیل، رنگ نسل اور مذہب سے بالاترہوکرلوگوں کو متحد کرتے ہیں۔

Fahad Mustafa

HARSHA BHOGLE

Tabool ads will show in this div