پیٹرولیم ڈیلرزایسوسی ایشن کا 5نومبر سے ملک گیر ہڑتال کااعلان

کمیشن میں اضافے کے فیصلے پر عملدرآمد کا مطالبہ
Oct 29, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Petroleum-Dealer-Warning-isb-Sot-28-10.mp4"][/video]

پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے 5 نومبر کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کر دیا، جس کے باعث ملک میں پیٹرول بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔

چیئر مین پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایس عبدالسمیع خان کے مطابق حکومت نے ڈیلرز کے کمیشن میں اضافے کی یقین دہانی کرائی لیکن اُس پر عمل نہیں ہوا، حکومت کی جانب سے وعدہ خلافی کی گئی۔

اُن کا کہنا تھا کہ عرصہ دراز سے ہم کوشش کر رہے ہیں کے ہمارا مارجن بڑھایا جائے جو کہ حکومت نے 5 فیصد کرنے کی یقین دہانی کروائی تھی لیکن وہ وعدہ پورا نہ کیا گیا، ان کا مطالبہ تھا کہ مارجن قیمت فروخت کا کم از کم 6 فیصد تک کیا جائے۔

عبدالسمیع خان نے کہا کہ اگر مارجن نہ بڑھا تو 5 نومبر کو ملک بھر میں پیٹرول پمپس بند کر دیں گے۔

پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں، پیٹرول 137.79 روپے پر فروخت ہورہا ہے جبکہ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یکم نومبر سے ایک بار پھر قیمتوں میں اضافہ ہوگا۔

ایف پی سی سی آئی کے صدر میاں ناصر حیات مگوں کے مطابق پیٹرول اور ڈیزل پر مارجن بلتر تیب 3.91 روپے اور 3.30 روپے فی لیٹر ہے اور اس کمیشن مارجن پر 12فیصد کا ودہولڈنگ ٹیکس، آئل مارکیٹنگ کمپنی کی لائسنسنگ فیس 20 پیسے فی لیٹر لاگو ہوتی ہے۔

ناصر حیات مگوں کے مطابق ملک میں پٹرولیم مصنوعات کی فراہمی کے لیے پہلے ہی کافی دباؤ میں ہے اور مستقبل قریب میں بھی اسی طرح رہے گی، جس کی وجوہات میں پیٹرول کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ، روپے کی قدر میں کمی اور بے یقینی شامل ہیں۔

ایف پی سی سی آئی کے صدر نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ ہونے کی وجہ سے پیٹرولیم ڈیلرز کے لیے کاروبار کرنے کی لاگت میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے، جس میں کم از کم اجرت 25 ہزار روپے، فیول کی قیمتوں میں افراط زر کی وجہ سے ڈیمانڈ میں کمی اور کم ہوتے ہوئے پرافٹ مارجن نے اس شعبہ کو غیر منافع بخش بنا دیا ہے۔

ناصر حیات مگوں کا کہنا تھا کہ اگر یہ شعبہ طویل مدتی طور پر بھی غیر منافع بخش ہوگیا تو اس شعبے میں مزید سرمایہ کاری رک جائے گی اور یہ ملک کی فیول سپلائی سیکیورٹی کے لیے ایک خوفناک صورتحال ہوگی۔

PETROLEUM DEALERS ASSOCIATION

Tabool ads will show in this div