طالبان کا تہران وزرائے خارجہ اجلاس میں شرکت نہ کرنےکافیصلہ

اجلاس بدھ منعقد ہوگا

طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ ایران میں منعقد ہونے والے پڑوسی ممالک کے وزرائے خارجہ اجلاس میں طالبان حکومت کا کوئی نمائندہ شرکت نہیں کرے گا۔

افغان چینل طلوع نیوز کے مطابق طالبان کی حکومت میں اطلاعات اور ثقافت کے نائب وزیر ذبیح اللہ مجاہد نے اتوار کو کہا کہ طالبان کے نمائندے اجلاس میں شرکت نہیں کریں گے تاہم انہوں نے اس اجلاس کو خوش آئند قرار دیا ہے۔

اس سے قبل ایرانی وزارت خارجہ نے اعلان کیا کہ تھا ایران، چین، پاکستان، تاجکستان، ترکمانستان اور ازبکستان وزرائے خارجہ کی سطح پر ہونے والے اجلاس میں شرکت کریں گے۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ اجلاس میں افغانستان میں جامع حکومت کی تشکیل کے طریقہ کار پر بات کی جائے گی۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی نے کہا کہ طالبان کو اجلاس میں شرکت کے لیے مدعو نہیں کیا گیا لیکن یہ نہیں بتایا کہ طالبان کو مدعو کیوں نہیں کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق ایران، چین، پاکستان، ازبکستان، تاجکستان اور ترکمانستان کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ چینی وزیر خارجہ اجلاس میں ورچوئل شرکت کریں گے تاہم روس کی طرف سے اجلاس میں شرکت کے حوالےسے کوئی اطلاع نہیں ملی۔

واضح رہے کہ 8 ستمبر کو پاکستان کی صدارت میں منعقد ہونے والے افغانستان کے پڑوسی ملکوں کے وزرائے خارجہ کے پہلے اجلاس میں یہ طے ہوا تھا کہ اگلا اجلاس تہران میں منعقد ہوگا۔

Zabihullah Mujahid

Tabool ads will show in this div