فضل الرحمان نے دوبارہ لانگ مارچ کو اسمبلی سے استعفوں سےمشروط کرديا

استعفوں کے بغيرلانگ مارچ کا کوئی فائدہ نہيں ہوگا

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Naeem-Ashraf-butt.mp4"][/video]

اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کے 18 اکتوبر کو ہونے والے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ہے۔

سماء کے نمائندہ خصوصی نعیم اشرف بٹ نے بتایا ہے کہ پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم کے اجلاس ميں دوبارہ لانگ مارچ کو اسمبلی سے استعفوں سےمشروط کرديا ہے۔

مولانا فضل الرحمان نے اجلاس میں کہا کہ استعفوں کے بغيرلانگ مارچ کا کوئی فائدہ نہيں ہوگا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ نون کے سربراہ نوازشريف نےمولانا فضل الرحمان کوکہا ہے کہ ہم آپ کےساتھ ہيں۔

لیگی اکثریتی رہنماؤں نے رائے دی کہ پاکستان پيپلز پارٹی اور اے اين پی کے بغير استعفوں کا فائدہ نہيں ہوگا۔

اجلاس میں استعفوں پر اتفاق رائے نہ ہونے کے باعث لانگ مارچ کی تاريخ نہيں بتائی گئی ہے۔

PDM

Tabool ads will show in this div