کسان کارڈ سے کاشتکاروں کو براہ راست سبسڈی ملےگی، وزیراعظم

کسانوں کو ہیلتھ کارڈز بھی دیے جائیں گے
Oct 15, 2021

Ptv Pm Imran Speech Kissan Portal New 15-10

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Ptv-Pm-Imran-Speech-Kissan-Portal-New-15-10.mp4"][/video]

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کسان کارڈ سے کاشتکار کو براہ راست سبسڈی ملے گی کیونکہ کسان کو خوشحال کرنے سے ملک خوشحال ہوتا ہے۔  

اسلام آباد میں کسان پورٹل کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پوری دنيا ميں کسانوں کو انشورنس ملتی ہے اور جب یہاں بھی کسان کو انشورنس مل جائے گی تو اسے بينک قرضہ بھی ملے گا جبکہ کسانوں کو ہيلتھ کارڈز بھی ديے جائيں گے۔

کسانوں کے ساتھ ہونے والے ظلم پر وزیراعظم نے کہا کہ 90فيصد سے زيادہ چھوٹے کسان کی آواز اوپر تک نہيں پہنچتی اور ظالم تھانے دار آجائے تو سب سے زيادہ کسان پستا ہے، ہماری يہی کوشش تھی کہ چھوٹے کسان کو کيسے اوپر اٹھانا ہے۔ کسان تو باہر پيسہ نہيں ليکر جائے گا اور نہ وہ لندن ميں فليٹس بنائے گا۔

عمران خان نے کہا کہ شوگر ملز والے کسانوں کو انتظار کرواتے تھے اور قيمت بھی کم ديتے تھے۔ ہمارے ہاں اتنی زيادہ گائے اور بھينسيں ہيں لیکن پھر بھی خشک دودھ درآمد کرنا پڑتا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ميں 50سال بعد بڑے ڈيمز بنا رہے ہيں اور ڈيمز بننے سے سيلاب کی تباہی بھی روک سکتے ہيں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ پاکستان جلد ہی زیتون برآمد کرے گا۔

کسان پورٹل

خطاب سے قبل وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان سیٹیزن پورٹل کے تحت کاشتکاروں کے لیے مخصوص ’’کسان پورٹل‘‘ کا اجرا کیا۔

 پاکستان سیٹیزن پورٹل میں اس سے پہلے کسانوں کے مسائل کے ازالے کے لیے کوئی مخصوص کیٹیگری مجود نہیں تھی جس کی وجہ سے ان کے مسائل متعلقہ اداروں تک داد رسائی کے لیے نہیں پہنچ پا رہے تھے۔

وزیر اعظم کے زرعی ترقی کے لیے متعین اہداف کے مطابق کسانوں کی امداد اور ان کے مسائل کا ترجیحی بنیادوں پر حل ممکن بنانے کے لیے کسان پورٹل اہم کردار ادا کرے گا۔

کسان پورٹل کے تحت وفاق اور صوبائی سطح پر متعلقہ اداروں میں کل 123 ڈیش بورڈ قائم کر دیے گئے ہیں۔

IMRAN KHAN

Tabool ads will show in this div