کراچی: فریئر ہال کی بحالی کیلئے کنزرویشن پروجیکٹ کا آغاز

امریکا نے مختلف ثقافتی ورثہ کیلئے 6.4ملین ڈالر مختص کیے
فوٹو: آن لائن
فوٹو: آن لائن
[caption id="attachment_2405439" align="alignnone" width="800"]Frere Hall فوٹو: آن لائن[/caption]

کراچی میں فریئر ہال کی بحالی کے لیے کے ایم سی، امریکی قونصلیٹ اور سندھ ایکسپلوریشن اینڈ ایڈونچر سوسائٹی کے تحت کنزرویشن پروجیکٹ کا آغاز ہوگیا۔

امریکی قونصل جنرل مارک اسٹرو، ایڈمنسٹریٹر کراچی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب اور ایس ای اے ایس کے صدر ڈاکٹر کلیم اللہ لاشاری، میڑو پولیٹن کمشنر کے ایم سی سید افضل زیدی، سیکریٹری جنرل ڈاکٹر عاصمہ ابراہیم نے پروجیکٹ کی تختی کی نقاب کشائی کی۔

امریکی قونصل جنرل کے مطابق امریکا نے پاکستان میں ایسے 30 ثقافتی ورثہ پروجیکٹس کے لیے 6.4 ملین ڈالر مختص کیے ہیں تاکہ پاکستانی ثقافتی ورثہ کو محفوظ کیا جاسکے۔

اس موقع پر ایڈمنسٹریٹر کراچی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ پروجیکٹ کے لیے امریکی قونصلیٹ نے ثقافتی تحفظ کے لیے مختص گرانٹ جاری کی ہے، پروجیکٹ کے تحت فریئر ہال کی تاریخی عمارت کو اس کی اصل شکل میں بحال کیا جائے گا۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ عمارت کے موجودہ اسٹرکچر اور اس کے تحفظ میں حائل مسائل کا تجزیہ کرکے تفصیلی رپورٹ بھی تیار کی جائے گی۔ ان اقدامات کی بدولت عوام الناس اگلی صدی تک کراچی کی یادگار اور تاریخی عمارتوں سے مستفید ہوسکیں گے۔

Tabool ads will show in this div