Technology

انسٹاگرام نیا فیچر ’’ٹیک آ بریک‘‘ جلد متعارف کروائے گا

نوجوانوں کو نقصان دہ مواد سے دور رکھنے کا منصوبہ
Oct 11, 2021
فوٹو: اے ایف پی
فوٹو: اے ایف پی
[caption id="attachment_2405289" align="alignnone" width="800"]Instagram فوٹو: اے ایف پی[/caption]

نوجوانوں کو نقصان دہ مواد سے دور رکھنے کے لیے انسٹاگرام ’’ٹیک آ بریک‘‘ یعنی وقفہ کے نام سے نیا فیچر جلد متعارف کروائے گا۔

ٹیکنالوجی کی ویب سائٹ دی ورج کے مطابق فیس بک کے عالمی امور کے نائب صدر نک کلیگ نے یہ بیان سی این این کے اسٹیٹ آف دی یونین پر دیا ہے۔

نک گلیک کا یہ بیان ایک ایسے وقت پر سامنے آیا ہے جب فیس بک کی سابق پروڈکٹ منیجر فرانسس ہیگن نے انکشاف کیا ہے کہ فیس بک اور انسٹاگرام جانتے بوجھتے بچوں کی ذہنی صحت اور معاشرے کے بگاڑ میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔

نک گلیک کا کہنا تھا کہ ’’ہم ایک ایسی چیز متعارف کرانے جا رہے ہیں جس کے بعد میرے خیال میں کافی فرق پڑے گا۔ یہ ایک نظام ہوگا جس میں اگر کوئی نوجوان بار بار ایک ہی مواد دیکھ رہا ہے جو اس کے لیے مناسب بھی نہیں ہے تو ہم اسے کسی دوسرے مواد پر منتقل کر دیں گے‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ کڈز پلیٹ فارم کے منصوبوں کو روکنے اور نوجوانوں کی نگرانی کے لیے والدین کو اختیاری کنٹرول دینے کے علاوہ انسٹاگرام نے ’’ٹیک آ بریک‘‘ کے نام سے ایک خصوصی فیچر متعارف کروانے کا منصوبہ بنایا ہے جس میں نوجوانوں کو محض ’’وقفہ‘‘ لینے کا اشارہ کیا جائے گا۔

انسٹاگرام کا یہ نیا فیچر کب متعارف کروایا جائے گا اس متعلق کمپنی کی طرف سے تاحال کوئی تاریخ نہیں دی گئی۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل فرانسس ہیگن نے امریکی سينیٹ کی کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ فیس بک پروڈکٹس بچوں اور جمہوریت کے لیے نقصان دہ ہیں اور سوشل ميڈيا کا يہ پليٹ فارم معاشروں میں تفرقے کا باعث بن رہا ہے۔

Tabool ads will show in this div