سعودی عرب کاعمرہ کی اجازت مکمل ویکسینیشن سے مشروط کرنیکااعلان

اجازت نامے حاصل کرنیوالوں کو بھی مکمل ویکسینیشن کرانا ہوگی

سعودی عرب میں حکام نے اعلان کیا ہے کہ اتوار سے مملکت میں منظورشدہ کووِڈ-19 ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوانے والوں کو ہی عمرے کے اجازت نامے جاری ہوں گے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی وزارت حج و عمرہ کے ایک اعلامیے میں بتایا گیا کہ اس نئے فیصلے کا اطلاق اتوار 10 اکتوبر کو شام 6 بجے سے ہوگا۔

وزارت نے سرکاری پریس ایجنسی کی جانب سے ہفتے کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام میں مناسکِ عمرہ اور نمازیں ادا کرنے اور مدینہ منورہ میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں داخلے کے اجازت ناموں کے اجراء پر نئی پابندی عائد کردی گئی ہے۔

بیان کے مطابق اب دونوں مقدس مقامات میں صرف ان ہی عازمین اور زائرین کو داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی جنہوں نے مملکت میں منظورشدہ کرونا وائرس کی ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوا رکھی ہیں، ایسے افراد جنہیں ویکسین سے مستثنیٰ قرار دیا گیا ہے، ان کے نام وزارت صحت کی ’’توکلنا" ایپلی کیشن پر ہونے چاہئیں‘‘۔

وزارت حج و عمرہ نے واضح کیا ہے کہ ویکسین نہ لگوانے ایسے افراد جنہیں عمرے کے دوران مکہ یا مدینہ میں نماز یا مناسک ادا کرنے کا اجازت نامہ مل چکا ہے کو اجازت نامے کی تنسیخ سے بچنے کیلئے مقررہ تاریخ سے 48 گھنٹے پہلے کرونا ویکسینیشن ممل کرانی ہوگی۔

سعودی وزارت نے مزید کہا ہے کہ ملک میں وبائی امراض کی صورتحال میں پیشرفت کے مطابق وباء سے متعلق تمام احتیاطی اور حفاظتی اقدامات کئے جاتے ہیں۔

COVID19

Tabool ads will show in this div