آٹھ اکتوبر2005کےزلزلےکی یادیں آج بھی رلا دیتی ہیں

کئی علاقے ایسے متاثر ہوئے کہ آج تک وہاں زندگی دوبارہ رواں نہ ہوسکی
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/8th-October-Disaster-Isb-Pkg-07-10.mp4"][/video]

ملک کے بالائی علاقوں میں 16 برس قبل آنے والے زلزلے نے ہزاروں جانیں لے لیں۔کئی علاقے ایسے متاثر ہوئے کہ آج تک وہاں زندگی دوبارہ رواں نہ ہوسکی۔ زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں 8 اکتوبر کو شہدا کی یاد میں تقاریب کا انعقاد کیا گیا۔

جمعہ کو آزاد کشمير مظفر آباد ميں 8 اکتوبر کے زلزلے کی ياد ميں تقريب منعقد کی گئی۔ تقریب میں وزیراعظم آزاد کشمیر سردارعبدالقیوم خان نیازی نے يادگار شہدا پر پھول رکھے۔ شہدا کی یاد میں یونیورسٹی کالج گراؤنڈ میں مرکزی تقریب ہوئی اور شہدائے زلزلہ کی یاد میں  سائرن بجا کر ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی۔شہدا کی یاد گار پر پھولوں کی چادرچڑھائی گئی اور ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی اورپولیس کے دستے نے سلامی پیش کی۔

اسلام آباد میں مارگلہ ٹاور میں شہدا کے لیے دعائیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ شہدا کے ورثا اور اسکاؤٹس نے یادگار پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔تقریب میں شہدا کے لواحقین نے شرکت کی۔ مارگلہ ٹاور زمین بوس ہونے سے 75 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

مزید پڑھیں: ننھی مصباح کی کنگھی

ایبٹ آباد میں بھی اس حوالے سے تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں زلزلہ متاثرین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

بالاکوٹ میں بھی8 اکتوبر 2005 کے زلزلہ کے 16 سال مکمل ہونے پر قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا جس میں طلباء اور معززین علاقہ نے بڑی تعداد میں شرکت کیں۔

مانسہرہ میں آج دن بھر زلزلہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے قبروں پر فاتحہ خوانی کا سلسلہ جاری رہا۔

آزاد کشمیر میں 16 سال قبل آج ہی کے دن قیامت خیز زلزلہ آیا تھا جس کے نتیجے میں 86 ہزار سے زائد افراد شہید ہوگئے تھے۔ زخمی ہونے والوں کی تعداد 70 ہزار سے زائد تھی جبکہ 28لاکھ سے زائد بے گھر ہوگئے تھے۔ اس اندوہناک وقت میں کسی کی موت کی خبر کوئی حیرت انگیز خبر نہیں تھی کہ گھر گھر لاشیں تھیں۔ ایک ایک گھر سے کئی کئی جنازے اٹھ رہے تھے۔ موت کی خبر، ایک عام سی خبر لگتی تھی۔ کوئی کسی کیلئے تعزیتی کلمات کہتا بھی تو ساتھ ہی اپنے پیاروں کی موت کا ذکر شامل کر کے اس تعزیت کو غیر ارادی طور پر ہلکا کر دیتا تھا اور احساس دلاتا کہ یہ غم  صرف تمہارا نہیں، ہر ایک اس سے گزر رہا ہے۔

Tabool ads will show in this div