امریکی نائب وزیر خارجہ آج پاکستان پہنچ رہی ہیں

وہ سیاسی اور عسکری حکام سے ملاقاتیں کریں گی
فائل فوٹو
فائل فوٹو
فائل فوٹو

امریکی نائب وزیر خارجہ 7 رکنی وفد کے ہمراہ 2 روزہ دورے پر آج پاکستان پہنچ رہی ہیں۔

امریکا کی نائب وزیر خارجہ وینڈی شرمین افغانستان کے معاملے پر واشنگٹن اور اسلام آباد کے درمیان مذاکرات اور افغانستان کی صورت حال پر بات چیت کیلئے پاکستان کا دورہ کر رہی ہیں۔ رپورٹس کے مطابق امریکی وفد کی جسمانی تلاشی اور وفد کی تصاویر نہ بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ امریکی وفد کے استقبال کے لیے وزرات خارجہ نے ایوی ایشن ڈویژن کو مراسلہ بھیج دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ امریکی وفد کو پی سی آر ٹیسٹ سے استثنا دیا جائے، تاہم سرکاری سطح پر ایسی کوئی ہدایت سامنے نہیں آسکیں۔

 

امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق وینڈی شرمین دوطرفہ ملاقاتوں، سول سوسائٹی کی تقریبات اور انڈیا آئیڈیاز سمٹ میں شرکت کے لیے 6 اکتوبر کو نئی دہلی پہنچی تھیں۔ وہ 7 اکتوبر کو نئی دہلی میں کاروباری شخصیات اور سول سوسائٹی کے اراکین سے ملاقاتوں کے بعد پاکستان روانہ ہونگی۔

 

محکمہ خارجہ کے ترجمان کے دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ڈپٹی سیکریٹری وینڈی شرمین، پاکستانی سینیر حکام سے ملاقاتوں کے لیے 7 سے 8 اکتوبر تک اسلام آباد کا سفر کرنے کے بعد اپنا دورہ مکمل کریں گی۔

 

واشنگٹن کے مطابق یہ ایک اہم اور بائیڈن انتظامیہ کے آنے کے بعد کسی بھی اعلیٰ امریکی عہدیدار کا پہلا دورہ ہوگا۔ وینڈی شرمین، امریکی سیکریٹری خارجہ انٹونی بلنکن کے بعد محکمہ خارجہ کی سب سے سینیر عہدیدار ہیں۔

رپورٹس کے مطابق بائیڈن انتظامیہ، پاکستان سے بات چیت میں چار اہم نکات پر توجہ مرکوز کرے گی، جس میں افغانستان میں طالبان حکومت کو تسلیم کیا جانا، افغانستان پر بین الاقوامی پابندیاں، افغانستان تک رسائی اور انسداد دہشت گردی تعاون شامل ہے۔

امریکی ماہرین کے مطابق اس وقت تک پاکستان اور دیگر ممالک کو طالبان کو تسلیم کرنے میں تاخیر کرنی چاہیے۔

INTELLIGENCE

WENDY SHERMAN

Tabool ads will show in this div