ڈینگی کے 4 ویرینٹس، مریض پردوسرا حملہ خطرناک

ڈاؤ يونیورسٹی کے پروفیسر آف پیتھالوجی سعید خان کی گفتگو

کرونا کی طرح ڈینگی کے بھی 4 ویرینٹس ہیں جنہیں سیرو ٹائپس کہاجاتا ہے اور ڈینگی مریض پر اگر دوسرا سیروٹائپس حملہ کرتا ہے تو وہ جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے۔

ڈاؤ يونیورسٹی کے پروفیسر آف پیتھالوجی پروفیسرسعید خان کا کہنا ہے کہ ڈینگی کا دوسرا وار مریض کی جان لے سکتا ہے لہٰذا پہلی بار ڈینگی کا شکار ہونے والے افراد کو خاص احتیاط کی ضرورت ہے۔

پروفیسر ڈاکٹرسعید خان  نے بتایا کہ ڈینگی کےمریض کے پلیٹليٹس مانیٹرکیےجاتے ہیں اور اگر کرونا مریض کوڈینگی ہوجائے توبیماری میں شدت آسکتی ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ دیگر شہروں کی طرح کراچی ميں بھی ڈینگی کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔

Dengue Cases

Tabool ads will show in this div