لیاری ایکسپریس وے:ہیوی ٹریفک چلانے سے متعلق امورکیلئے کمیٹی قائم

ہیوی ٹریفک کیلئے مخصوص گزرگاہیں ضروری ہیں، مرتضیٰ وہاب

ایڈمنسٹریٹر کراچی، ترجمان حکومت سندھ و مشیر قانون بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ ہیوی ٹریفک شہر میں 90 کلو میٹر کا فاصلہ طے کرکے سپر ہائی وے پہنچتا ہے، لیاری ایکسپریس وے پر ہیوی ٹریفک کے گزرنے سے شہر میں ٹریفک کی روانی میں بہتری آئے گی، ہائی وے پر انتظامی امور طے کرنے کیلئے 6 رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے لیاری ایکسپریس وے پر ہیوی ٹریفک چلانے کے حوالے سے منعقدہ اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں میونسپل کمشنر کے ایم سی افضل زیدی، ایڈیشنل آئی جی پولیس عمران یعقوب منہاس، ڈی آئی جی ٹریفک اقبال دارا، چیف انجینئر کے ڈی اے خالد مسرور، نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے ڈائریکٹر مینٹیننس عبدالقدوس، ڈائریکٹر کوآرڈینیشن منظور حسین، پروجیکٹ ڈائریکٹر لیاری ایکسپریس وے سعید احمد، ڈپٹی ڈائریکٹر غلام مرتضیٰ اور کے ایم سی کے متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد و رفت ایک اہم مسئلہ ہے، جسے بہتر طریقے سے حل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، کراچی کی مختلف شاہراہوں اور دیگر اہم سڑکوں پر ٹریفک کے بڑھتے ہوئے دباؤ کے پیش نظر یہ ضروری ہے کہ ہیوی ٹریفک کیلئے مخصوص گزرگاہیں مختص کی جائیں۔

ان کا کہنا ہے کہ لیاری ایکسپریس وے پر ہیوی ٹریفک کیلئے موزوں اور مناسب انفراسٹرکچر موجود ہے، شہر میں چلنے والی ہیوی ٹریفک کے لیاری ایکسپریس وے کو استعمال کرنے سے دیگر سڑکوں اور شاہراہوں پر ٹریفک کی روانی برقرار رہے گی اور ٹریفک جام کے مسائل سے بہتر انداز میں نمٹا جاسکے گا۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی نے کہا کہ ٹریفک کے نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے تمام متعلقہ اداروں کے اشتراک اور تعاون سے کام کیا جارہا ہے اور ہماری کوشش ہے کہ شہر میں ٹریفک کے نظام کو جلد از جلد بہتر بنایا جائے، اس مقصد کے تحت سندھ پولیس، نیشنل ہائی وے اتھارٹی، کے ڈی اے سمیت تمام متعلقہ اداروں کو آن بورڈ لیا گیا ہے اور ایسی حکمت عملی اختیار کی جارہی ہے جس سے شہر میں گاڑیوں کی آمد و رفت خصوصاً ہیوی ٹریفک کی نقل و حرکت بہتر ہوگی اور شہریوں کو درپیش مسائل حل کئے جاسکیں گے۔

بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی سے مطالبہ کیا کہ اس ایکسپریس وے کے معیار کو بھی دیگر شہروں کی طرح اپ گریڈ کریں، اسٹریٹ لائٹس کا فوری انتظام کیا جائے، اسٹاف کے بکس بہترب بنائیں، ماڑی پور کے داخلی راستے پر اسٹاف کی تعداد میں اضافہ کیا جائے، ای ٹکٹنگ کا بھی آغاز کیا جائے تاکہ کم سے کم وقت میں گاڑیاں ایکسپریس وے پر داخل ہوسکیں۔

دوسری جانب ایڈمنسٹریٹر کراچی، ترجمان حکومت سندھ و مشیر قانون بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے سائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری کے دفتر کے دورے اور سائٹ میں زیر تعمیر سڑک کے معائنے کے موقع خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سائٹ کے علاقے میں بڑی تعداد میں صنعتی و کاروباری یونٹس قائم ہیں جہاں سارا سال تجارتی و پیداواری سرگرمیاں جاری رہتی ہیں، کراچی کا یہ اہم صنعتی علاقہ بڑی تعداد میں لوگوں کو روزگار مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ ملک کی معیشت کو مستحکم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

انہوں نے کہا ک سائٹ کے علاقے کے مسائل حل کرنا ہماری ترجیحات میں شامل ہے، علاقے میں سیوریج کے مسائل حل کئے جائیں گے، اس کے علاوہ یومیہ 50 ملین گیلن پانی سائٹ کے علاقے میں پہنچانے پر بھی کام جاری ہے، تمام اداروں کا شہر کی ترقی کیلئے سرگرم ہونا ضروری ہے۔

مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ کراچی کے تمام صنعتی زونز میں بنیادی انفراسٹرکچر کو بہتر بنایا جائے گا تاکہ ان علاقوں میں صنعتی و کاروباری سرگرمیوں کو فروغ ملے اور ملکی برآمدات میں اضافے کا ذریعہ بن سکے۔

Liyari Expressway

Tabool ads will show in this div