نورمقدم قتل کیس:تمام ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14روزکی توسیع

کیس ایڈیشنل سیشن جج کے پاس منتقل
ISB Noor Murder Case Peshi 24-07 فائل فوٹو

اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نے نور مقدم قتل کیس میں تمام ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 روز کی توسیع کر دی۔

عدالت نے مرکزی ملزم ظاہر جعفر سمیت تمام ملزمان کو 23 ستمبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا۔

ایڈیشنل سیشن جج عطاء ربانی نے نور مقدم کیس کی سماعت کی۔ مرکزی ملزم ظاہر جعفر، والدین اور تین دیگر ملزمان عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔

عدالت نے آئندہ سماعت میں تھراپی ورکس کے چھ ملزمان کو عدالت کے سامنے پیش ہونے کا حکم بھی دیا۔

ملزمان کے وکیل راجہ رضوان عباسی نے کہا کہ چھ دیگر تھراپی ورکس کے ملزمان ضمانت پر ہیں عدالت انہیں نوٹس دے کر طلب کرلے۔ ایڈیشنل سیشن جج عطاء ربانی نے کہا کہ جو ملزمان رہ گئے ہیں ان کو آئندہ سماعت پر حاضری کے لیے بلا رہے ہیں، جب تمام ملزمان کی حاضری لگ جائے گی تو چالان کی نقول اس کے بعد تقسیم کریں گے۔

وکیل راجہ رضوان عباسی نے کہا کہ ان کیمرہ سماعت کی درخواست دیں گے، جس پر عدالت نے کہا کہ جب درخواست آئے گی تو قانون کے مطابق دیکھ لیں گے۔

عدالت نے کیس کی مزید سماعت 23 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

اس سے قبل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نے کیس ایڈیشنل سیشن جج عطاء ربانی کے پاس منتقل کیا۔ مرکزی ملزم ظاہر جعفر سمیت تمام ملزمان کا ٹرائل ایڈیشنل سیشن جج عطاء ربانی کریں گے۔

NOOR MUKADAM

Tabool ads will show in this div