رنگ روڈ کرپشن کیس:سابق کمشنر راولپنڈی کی درخواست ضمانت مسترد

پروجیکٹ ڈائریکٹر وسیم تابش کی درخواست بھی مسترد
[caption id="attachment_2280809" align="alignnone" width="800"]Rawalpindi ring road فائل فوٹو[/caption]

لاہور کی اینٹی کرپشن عدالت نے رنگ روڈ راول پنڈی منصوبے میں مبینہ کرپشن کیس میں سابق کمشنر راولپنڈی محمد محمود اور پروجیکٹ ڈائریکٹر وسیم تابش کی درخواست ضمانت مسترد کر دی۔

اینٹی کرپشن عدالت کے جج راجہ ارشد حسین نے درخواست ضمانت مسترد کی۔ عدالت نے وکلاء کی حتمی بحث کے بعد فیصلہ سنایا۔

ملزمان کے خلاف اینٹی کرپشن نے مقدمہ درج کر رکھا ہے جبکہ ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر لاہور کی کیمپ جیل میں ہیں۔

واضح رہے کہ 28جولائی کو لاہور کی ضلع کچہری نے رنگ روڑ راولپنڈی منصوبے میں مبینہ کرپشن اور بے ضابطگیوں کے کیس میں گرفتار سابق کمشنر راولپنڈی محمد محمود اور پروجیکٹ ڈائریکٹر وسیم تابش کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا۔

رنگ روڈ روالپنڈی منصوبے کی ابتدائی تحقيقاتی رپورٹ میں کابینہ کے کسی رکن کے ملوث ہونے کا ذکر نہیں کیا گیا۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ رنگ روڈ منصوبے سے متعلق ہاؤسنگ سوسائیٹیز کی تحقیقات نیب کرے گا۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ رنگ روڈ میں کیس میں زلفی بخاری اور غلام سرور خان کے ملوث ہونے کا الزام تھا۔ الزامات کے بعد زلفی بخاری نے معاون خصوصی کےعہدے سے استعفیٰ ديا تھا۔

رنگ روڈ منصوبے کی تحقیقاتی رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ الائنمنٹ تبدیل کرنے کی منظوری صوبائی ڈویلپمنٹ بورڈ سے نہیں لی گئی تھی۔ رنگ روڈ کیس میں الائنمنٹ تبدیل کرنا اور غیر قانونی ایوارڈ ہونا ثابت ہوا ہے۔

تحقیقاتی رپورٹ کی روشنی میں ڈپٹی پراجیکٹ، پراجیکٹ ڈائریکٹر اور دیگر متعلقہ افراد کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ تحقیقاتی رپورٹ مرتب کرنے کیلئے ‏6 رکنی جے آئی ٹی نے تحقیقات میں 21 ہزار صفحات کی جانچ پڑتال کی۔ اسی رپورٹ میں ‏پراجیکٹ ڈائریکٹر کا وزیراعلیٰ پنجاب سے ہدایات لینے کا دعویٰ بھی غلط ثابت ہوا ہے۔

رپورٹ کے متن کے مطابق ہاؤسنگ سوسائیٹیز کو فائدہ پہنچانے کیلئے 5 نئے انٹر چینجز تجویز کیے گئے۔ ‏رنگ روڈ منصوبے میں وزیراعظم کی ہدایات کی خلاف ورزی کی گئی۔

‏منصوبے کی لاگت میں پی سی ون میں تبدیل کرنے سے 10 ارب روپے اضافہ ہوا۔ 51.7 کلو میٹر کا منصوبہ 6 ارب 24 کروڑ روپے میں مکمل ہونا تھا۔ منصوبہ بڑھ کر 66.3 کلو میٹر اور لاگت 16 ارب 30 کروڑ روپے ہوگئی۔ زمین کی خریداری میں حکومت کو 2 ارب 10 کروڑ روپے کا نقصان ہوا۔

RAWALPINDI RING ROAD

Tabool ads will show in this div