پاک فضائیہ کے دستے کی راشد منہاس شہید کی قبر پر حاضری

مرکزی تقریب ایئر ہیڈکواٹرز اسلام آباد میں ہوئی

یوم فضائیہ کے موقع پر پاکستان ایئر فورس کے چاق و چوبند دستے نے شہید راشد منہاس کی قبر پر حاضری دی۔

ترجمان پاک فضائیہ کے مطابق 7 ستمبر یوم فضائیہ کے موقع پر راشد منہاس شہید کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھانے کی تقریب ہوئی۔ ائیر وائس مارشل زعیم افضل، ائیر آفیسر کمانڈنگ سدرن ائیر کمانڈ نے اس موقع پر دستے کی قیادت کی۔

ائیر وائس مارشل زعیم افضل کا کہنا تھا کہ نوجوان پائلٹ کی قربانی اس قوم کا عظیم سرمایہ ہے، جنہوں نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرکے ایک عظیم مثال قائم کی۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں یوم فضائیہ آج منایا جا رہا ہے۔ اس سلسلے میں تمام ائیر بیسز اور تنصیبات پر دن کا آغاز 1965 اور 1971 کی جنگوں کے شہداء اور ان تمام افراد کے لیے خصوصی دعاؤں اور قرآن خوانی سے کیا گیا جنہوں نے پاکستان کے معرض وجود میں آنے سے لے کر اب تک مادرِ وطن کے لیے اپنی جانیں قربان کیں۔

اس دن کی مناسبت سے مرکزی تقریب ائیر ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد میں منعقد کی گئی، جس کے مہمان خصوصی سربراہ پاک فضائیہ ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدھو تھے۔

تقریب سے خطاب میں ایئر چیف کا کہنا تھا کہ پاک فضائیہ خطے کی بدلتی ہوئی صورت حال سے باخبر ہے اور پاکستان کی سالمیت اور وقار کے دفاع کے لئے مکمل تیار ہے۔

یوم فضائیہ کیوں منایا جاتا ہے

ستمبر کی جنگ کے آغاز سے پہلے شاید کسی کو یہ گمان بھی نہیں ہوگا کہ پاک فضائیہ کے شاہین عددی اعتبار سے اپنے سے کہیں بڑے دشمن پر ایسا قہر بن کر ایسے ٹوٹیں گے، کہ دنیا دنگ رہ جائے گی۔ آج سے 56 سال پہلے یہ آج ہی کا دن تھا جب صرف دو دنوں کے اندر دشمن کے 56 طیاروں کی تباہی نے اُس کی فضائیہ کی کمر توڑ دی تھی۔

ستمبر کی جنگ میں آج ہی کے دن جب سرگودھا کے محاذ پر فضاؤں میں بلند ایم ایم عالم نے ایک منٹ میں دشمن کے 5 طیارے گرا کر پاک فضائیہ کی تربیت اور جوش جنون کی مثال بن گئے تھے۔ ایم ایم عالم، سیسل چوہدری، سرفراز رفیقی اور ایسے ہی دوسرے شاہینوں نے آنے والے فضائیہ کے جوانوں کے لیے ایک معیار بھی طے کر دیا تھا۔

RASHID MINHAS

M M ALAM

Tabool ads will show in this div