اقراءعزیزکا شرمیلا فاروقی کوجواب

متھیرا کا اپنی تعلیمات خود تک محدودرکھنے کامشورہ
کولاج : سماء ڈیجیٹل

اقراء عزیز نے یاسرحسین کی تعریف کے جواب میں پی پی سیاستدان شرمیلا فاروقی کے تبصرے پراپنا موقف واضح کیا ہے۔

اداکارہ نے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر یاسر کی تصویر شیئر کی تھی جس میں وہ بیٹے کے کپڑے تبدیل کررہے ہیں۔ بچے کی ذمہ داریوں میں ہاتھ بٹانے پر خوشی کااظہار کرنے والی اقراء نے کیپشن میں لکھا تھا کہ یاسر نے پہلی بار کبیرکے کپڑے تبدیل کیے اور مجھے ان پرفخر ہے۔

اقراء کا کہنا تھا کہ یاسر نے زندگی کے اس نئے مرحلے میں میری بہت مدد کی ہے۔ ڈائپرتبدل کرنے سے لے کرمیرے آرام کےدوران اسے سنبھالتے ہوئے اور مجھے ناشتہ تک بنا کر دیتے ہیں۔

یاسرکی مشکوراقراء کی یہ پوسٹ سوشل میڈیا پر اس وقت زیربحث بن گئی جب شرمیلا نے تبصرہ کیا کہ ' اس میں فخرکرنے کی کوئی خاص بات نہیں۔ تمام اچھے شوہر اپنے بچوں کیلئے ایسا کرتے ہیں ۔ میرے شوہر بیٹے کو نہلاتے، ڈائپرتبدیل کرتے اور فیڈر پلاتے ہیں۔ اگر میری طبیعت ٹھیک نہ ہو توہمارے بیٹے کو اس کے پری اسکول چھوڑنے جاتے ہیں اور انہیں ایسا کرنا بہت پسند ہے'۔

اقراء نے انسٹا اسٹوریزمیں شرمیلا کو جواب دیتے ہوئے لکھا ' ہوسکتا ہے کہ آپ کیلئے یہ بہت بڑی چیز نہ ہو لیکن ایسے مردوں سے بھری دنیا میں جو کبھی اپنی بیویوں کو بطورماں اپنے بچے (جو دونوں کا ہے ) کے کاموں کیلئے نہیں سراہتے ، میرا شوہرایسا کرتا ہے' ۔

یاسرکوسراہتے ہوئے اقراء نے شرمیلا کے سامنے سوال رکھا ' اوراگروہ میری مدد اورحمایت کرتا ہے، مجھے سراہتا ہے تومیں کیوں نہیں؟' ۔

اپنا موقف بتانے والی اقراء نےمزید واضح کیا کہ ' خواتین چاہتی ہیں کہ مرد ان کی مدد کریں اور پھرکریں تو بول دو ' فخر کرنے والی کوئی بات نہیں '، برابری دونوں طرف سے ہونی چاہیے۔

بےبی شارک: اقراء اور یاسر کا ابرارالحق کوبلاواسطہ جواب

اس بحث کے مرکز یاسرحسین نے بھی اپنے تبصرے میں لکھا، ' بھائی پیارسے بھی مسئلہ ہے، سراہنے سے بھی مسئلہ ہے،فخر محسوس کرنے سے بھی مسئلہ ہے، سیاست کرکے ملک کو برباد کرنے سے کوئی مسئلہ نہیں '۔

معاملےمیں ٹی وی میزبان متھیرا نے بھی انٹری دی جو اکثرسماجی موضوعات پر آواز اٹھاتی رہتی ہیں۔

متھیرا نے واضح کیا کہ اگرکوئی اپنی ذاتی باتیں یا جذبات شیئرکررہا ہے تو لوگوں کو اپنی ' تعلیمات ' اپنے پاس رکھنی چاہئیں۔

بیٹے کی پیدائش کے بعد سے یاسراکثر اس حوالے سے بات کرتے نظرآتے ہیں کہ ماؤں کے لیے اپنے بچوں کی پرورش کرنا کتنا مشکل ہے اوریہ بات غلط ہے کہ ان کی پرورش کے طریقہ کار پر سوالات اٹھائے جائیں۔

اٹھائیس دسمبر 2019 کو کراچی میں شادی کے بندھن میں بندھنے والے یاسر اوراقراء کے یہاں 23 جولائی 2021 کو بیٹے کی پیدائش ہوئی تھی۔

Nida Yasir

Yasir Hussain

IQRA AZIZ

Tabool ads will show in this div