وادی پنج شیر:طالبان نے امرللہ صالح کے ٹھکانے کا محاصرہ کرلیا

جنگ بندی ختم

طالبان نے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان کے سابق نائب صدر اور پنج شیر مزاحمتی تحریک کے رہنما امراللہ صالح کے ٹھکانے کا محاصرہ کرلیا گیا ہے۔

افغانستان کی وادی پنج شیر میں مزاحمت کاروں اور طالبان کے مابین شدید لڑائی جاری ہے۔ طالبان نے پریان اور خنج کے بعد انابہ کے اضلاع پر بھی قبضہ کر لیا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق فریقین میں مذاکرات کے لیے جنگ بندی ختم ہوگئی ہےجس کے بعد دونوں اطراف سے جنگی مورچے سنبھال لیے گئے ہیں۔

فورسز نے صوبائی دارالحکومت بزارک میں داخل ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔ طالبان نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے امراللہ صالح کے ٹھکانے کا محاصرہ کرلیا اور کچھ علاقوں میں لڑائی جاری ہے جو جلد جیت لی جائے گی۔

مزاحمتی تحریک کے ترجمان فہیم دشتی نے کہا ہے کہ پہاڑ پر دھماکے کی وجہ سے دشتِ ریوت کے علاقے میں طالبان محصور ہو کر رھ گئے ہیں اور ان کی تمام گاڑیاں اور سامان پیچھے چھوٹ گیا ہے جبکہ خاواک کراسنگ بھی منقطع ہو چکی ہے۔

دوسری جانب افغانستان کی قومی ایئر لائن نے اندرون ملک پروازوں کا آغاز کردیا جس کے بعد کابل ایئرپورٹ سے تین شہروں کے لیے فلائٹس بحال ہو گئیں۔ مسافر طیارے ہرات، مزار شریف اور قندھار پہنچے اور توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ انٹرنیشنل فلائٹس بھی جلد بحال ہوجائیں گی۔

ادھر افغانستان سے جانے والے ایک ہزار 400 افراد تاحال قطرمیں موجود ہیں، دوحہ سے 57 ہزار افراد کو امریکا اور یورپ منتقل کردیا گیا۔ انخلاء کے دوران قطرمیں امریکی بیس پر 9 بچوں کی پیدائش بھی ہوئی۔

TALIBAN

Panjshir

Amrullah Saleh

Tabool ads will show in this div