مستونگ:ایف سی گاڑی کےقریب خودکش حملہ،4جوان شہید

بیس افراد زخمی بھی ہوئے

کوئٹہ میں مستونگ روڈ پر ایف سی کی  گاڑی کے قریب خودکش حملے میں 4 ایف سی اہل کار شہید ہوگئے۔

پولیس کے مطابق دھماکا مستونگ روڈ کے قریب ہوا۔ ڈی آئی جی پولیس نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ خودکش حملہ ایف سی کی سونا چیک پوسٹ کے قریب ہوا، جس میں 4 ایف سی اہلکار شہید، جب کہ 16 اہل کاروں سمیت 18 افراد زخمی ہوئے۔ دھماکا اتنا شدید تھا کہ قریب کھڑی 3 موٹر سائیکلیں اور 3 گاڑیاں بھی مکمل طور پر تباہ ہوگئیں۔

حملے کے فوراً بعد لاشوں کو ضروری کارروائی جب کہ زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کیلئے سول اسپتال منتقل کردیا گیا۔

پولیس کے مطابق خودکش دھماکے میں ايف سی کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا، جو معمول کے گشت پر تھی۔ حملے میں5 سے 6 کلو دھماکا خیز مواد اور بال بیئرنگ استعمال کیے گئے۔ حملہ آور نے موٹر سائیکل کے ذریعے ایف سی گاڑی کو نشانہ بنایا۔

حملے کے بعد قانون نافذ کرنے والوں اداروں کی جانب سے جائے وقوعہ کو سیل کردیا گیا، جب کہ بم ڈسپوزل اسکواڈ نے جائے وقوعہ سے اہم شواہد اکھٹے کرلیے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ یہ ایک ایسی شاہراہ ہے جہاں سے زیادہ تر مسافر کوچز اور بسیں گزرتی ہیں۔

وفاقی وزیر داخلہ

خودکش حملے پر ردعمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ کوئٹہ میں کافی دنوں سے دہشت گردی کے واقعات ہو رہے ہیں۔ پاکستان پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ پاکستان اس دباؤ سے نکل کر  خطے میں اہم کردار ادا کرے گا۔

وزيراعظم عمران خان نےواقعے کی شديد الفاظ میں مذمت کی ہے اور جوانوں کی شہادت پر افسوس کا اظہار کیا ہے، وفاقی وزير اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ بھارت کا افغانستان ميں کوئی کردار نہيں ہے، اپنے مسائل پر توجہ دے۔

BLA

Tabool ads will show in this div