لاہور:ہراسانی کےبڑھتے واقعات،خواتین پولیس کا فلیگ مارچ

ایلیٹ فورس، لیڈی وارڈنز اور خواتین اہلکاروں کی شرکت
Sep 02, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/09/Flag-March-Against-Harasment-Lhr-Pkg-02-09.mp4"][/video]

لاہور میں خواتین کے ساتھ بدتمیزی اور ہراسانی کے بڑھتے واقعات کے پیش نظر خواتین پولیس اہلکاروں نے اینٹی ویمن ہراسمنٹ فلیگ مارچ کیا۔

خواتین پولیس اہلکاروں کے اینٹی ویمن ہراسمنٹ فلیگ مارچ میں ایلیٹ فورس، لیڈی وارڈنز اور خواتین اہلکاروں نے شرکت کی۔

اس موقع پر ویمن سیفٹی ایپ کے استعمال کے حوالےسے طالبات کو بریفنگ بھی دی گئی۔

اے ایس پی بشریٰ نثار نے میڈیا کو بتایا کہ فلیگ مارچ کا مقصد خواتین میں اعتماد بحال کرنا اور ویمن سیفٹی ایپ کے استعمال کے حوالے سے آگاہی فراہم کرنا تھا۔

لاہور: خاتون سے بدسلوکی کا کیس، 10ملزمان کی شناخت ہوگئی

قبل ازیں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگر کا کہنا تھا کہ مختلف شاہراہوں پر کیے جانے والے فلیگ مارچ کا ایک مقصد جنسی زیادتی کے واقعات کے باعث پائے جانے والے خوف و ہراس کو ختم کرنا بھی ہے۔

لاہور میں خواتين سے چھيڑخانی کی ايک اور ويڈيو وائرل

یاد رہے کہ مینار پاکستان سے متصل گریٹر اقبال پارک میں 400 سے زائد افراد نے خاتون ٹِک ٹاکر کیساتھ نازیبا حرکات کی تھیں جبکہ سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ایک اور ویڈیو میں چنگچی رکشے میں خواتین کو ہراساں کرنے کا واقعہ سامنے آیا تھا جس کے بعد خواتین عدم تحفظ پیدا ہوا تھا۔

دوسری جانب لاہور پولیس نے دونوں واقعات کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے تاہم ملزمان کی شناخت اور گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔

LAHORE POLICE

FLAG MARCH

Tabool ads will show in this div