وزیراعظم نے احساس تعلیمی وظائف پروگرام کا اجراء کر دیا

لڑکیوں کیلئے وظیفے کی رقم زیادہ رکھی گئی ہے

Pm Imran Khan Speech Ehsas Taleem Program Ptv

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/09/Pm-Imran-Khan-Speech-Ehsas-Taleem-Program-Ptv.mp4"][/video]

وزیر اعظم عمران خان نے مستحق گھرانوں کے لیے احساس تعلیمی وظائف پروگرام کا اجراء کر دیا تاکہ وہ اپنے بچوں کو پرائمری، سیکنڈری اور ہائر سیکنڈری تعلیم کے لیے اسکول بھیج سکیں۔

اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ملک کا سب سے بڑا سرمایہ اس کے لوگ ہوتے ہیں اس لیے جو لوگوں کو تعلیم نہیں دیتے وہ اپنے سرمایہ کو ضائع کرتے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہم نے لڑکیوں کی تعلیم کو اہمیت نہیں دی، معاشرے کو جتنا فائدہ پڑھی لکھی خاتون پہنچاتی ہے مرد نہیں پہنچاتا۔

انہوں نے کہا کہ بچوں اور بچیوں کو تعلیم کے زیور سے آراستہ کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے۔ پاکستان میں 2کروڑ بچے اسکول نہیں جاتے لیکن میں ہر پاکستانی بچے کو تعلیم دلانا چاہتا ہوں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ماضی کی حکومتوں نے تعلیم پر کوئی توجہ نہیں دی لیکن ہماری حکومت کی پوری کوشش ہے کہ غریب گھرانوں کے بچوں کو تعلیم دی جائے اور اسکول وظائف سے کوشش کر رہے ہیں بچوں کو تعلیم دی جائے۔

ملک بھر کے تمام اضلاع میں یہ پروگرام شروع کیا جائے گا جس کے تحت تمام اضلاع میں اہل گھرانوں کے 4 تا 22 سال کی عمر کے بچے احساس تعلیمی وظائف سے مستفید ہوں گے۔

یہ پروگرام احساس کی وظیفہ پالیسی کے مطابق ترتیب دیا گیا ہے جو کہ لڑکوں کے مقابلے میں لڑکیوں کے لیے زیادہ وظیفہ کی رقم کو ترغیب دیتا ہے۔

احساس تعلیمی وظائف کے تحت پرائمری اسکول کے لڑکوں کو 1500روپے سہہ ماہی وظیفہ اور لڑکیوں کو 2ہزار روپے، سیکنڈری اسکول کے لڑکوں کو ڈھائی ہزار روپے اور لڑکیوں کو 3ہزار روپے جبکہ ہائر سیکنڈری لیول پر لڑکوں کو 3ہزار 500روپے اور لڑکیوں کو 4ہزار روپے سہہ ماہی ملیں گے۔ تمام تعلیمی وظائف ماؤں کو اپنے بچوں کی 70فیصد حاضری پر بائیومیٹرک طریقے سے ادا کیے جائیں گے۔

وزیراعظم پرائمری تعلیم مکمل کرنے پر لڑکیوں کے لیے پرائمری گریجویشن وظائف کا بھی اعلان کریں گے جبکہ پرائمری تعلیم کی تکمیل پر ہر اہل طالبہ کو یکمشت 3ہزار روپے کا احساس گریجویشن بونس جاری ہوگا۔

احساس پروگرام کی چیئرمین ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا ہے کہ پروگرام کو بدعنوانی سے بچانے کے لیے مکمل طور پر ڈیجیٹل نظام متعارف کروایا گیا ہے۔ تخمینے کے مطابق ملک بھر میں ایک کروڑ لاکھ بچے اسکولوں سے باہر ہیں اور یہ تاریخ ساز پروگرام ان بچوں کو تعلیم کی جانب راغب کرے گا۔

ڈاکٹر ثانیہ نے کہا کہ ملک میں بچوں کی تعلیم کے فروغ کے لیے پروگرام کے تحت لڑکیوں کے لیے خاص مراعات رکھی گئی ہیں اور ملکی تاریخ میں پہلی بار اب غریب کے بچے بھی اعلیٰ تعلیم تک رسائی حاصل کر سکیں گے۔

IMRAN KHAN

EHSAAS PROGRAM

SCHOLARSHIP PROGRAM

Tabool ads will show in this div