اب تک ناقابل تسخیر پنج شیر میں طالبان نےقدم رکھ دیا،افغان میڈیا

طالبان رہنما کا دعویٰ،مزاحمتی گروپ کی تردید

افغان نیوز چینل طلوع نے طالبان رہنماؤں کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے جنگجو پنج شیر میں داخل ہوگئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق طالبان رہنما انعام اللہ سمنگانی کا کہنا ہے کہ بات چیت کے دروازے تاحال کھلے ہیں اور آج بھی احمد مسعود گروپ کے وفد نے کابل میں طالبان رہنماؤں سے ملاقات کی ہے۔ انعام اللہ سمنگانی کا کہنا ہے کہ طالبان اور احمد مسعود کے جنگجوؤں کے درمیاں کوئی جھڑپ نہیں ہوئی تاہم طالبان نے صوبے میں پیش قدمی کی ہے اور طالبان مختلف راستوں سے پنج شیر میں داخل ہوگئے ہیں۔ دوسری جانب پنج شیر مزاحتمی گروپ کے ایک رکن محمد الماس زاہد نے طالبان کے ان دعوں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ پنج شیر میں نہ کوئی لڑائی ہوئی ہے اور نہ ہی طالبان وہاں داخل ہوگئے ہیں۔ محمد الماس زاہد کا کہنا ہے کہ مذاکرات کا دوسرا دور بھی کامیابی سے تکمیل تک پہنچ چکا ہے تاہم ان مذاکرات کی ناکامی دونوں فریقین کے لیے بھاری نقصان کا باعث بنے گی۔ واضح رہے کہ طالبان نے افغانستان کے دارالحکومت کابل سمیت ملک کے 33 صوبوں پر قبضہ کرلیا ہے تاہم ملک کا 34 واں صوبہ پنج شیر اب تک ناقابل تسخیر ہے۔ پنج شیر اس وقت طالبان مخالف قوتوں کا گڑھ بنا ہوا ہے اور اب اس شہر میں احمد شاہ مسعود اور سابق افغان نائب صدر امرللہ صالح بچی کچھی افغان فوج اور مقامی ملیشیا کی قیادت کررہے ہیں۔ پنج شیر پورے ملک کا ایک پیچیدہ صوبہ ہے جہاں سڑکوں کا نظام نہ ہونے کے برابر اور پورا خطہ پہاڑوں میں گھرا ہوا ہے۔ یہ علاقہ ہندوکش پہاڑی سلسلے کے ساتھ واقع ہے اور اوسطً سطح سمندر سے 2200 میٹر کی بلندی پر واقع ہے جبکہ اس کے بعض مقامات سطح سمندر سے 6 ہزار میٹر کی بلندی پر بھی ہیں۔ وادی پنج شير کو اس کا محل وقوع دفاعی اعتبار سے مضبوط بناتا ہے وادی تک رسائی صرف دريائے پنج شير کے ساتھ ايک تنگ راستے سے ممکن ہے۔ یہ علاقہ ایک قلعے کی صورت میں ہے جس کے باعث یہ بیرونی حملہ آوروں کے لیے ہمیشہ سے ایک مشکل محاذ ثابت ہوا ہے۔ جب سویت یونین نے افغانستان پر حملہ کیا تھا تو سوویت افواج اس پر قبضہ نہیں کرسکے تھے۔ سوویت فوج کے انخلاء کے بعد بھی اس حصے میں تناؤ برقرار رہا پہلے افغان حکومت کے ساتھ محاذ آرائی اور بعد میں طالبان تحریک کے ساتھ۔ جو سن 1994 میں افغانستان کے پشتون اکثریتی علاقوں میں شروع ہوئی تھی تاہم طالبان بھی اپنے پہلے دور اقتدار میں پنج شیر کا کنٹرول حاصل نہیں کرسکے تھے۔

AFGHAN TALIBAN

Panjshir

Tabool ads will show in this div