افغانستان کو تنہاچھوڑا تو نقصان سب کا ہوگا،شاہ محمود

افغانستان کے لوگ امن چاہتے ہیں
فائل فوٹو

مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ افغانستان کی صورت حال بگڑتی ہے تو سب متاثر ہونگے۔ افغانستان کو اگر تنہا چھوڑا گیا تو اس کا نقصان سب کو ہوگا۔

افغانستان کی موجودہ صورت حال پر پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ ہمسایہ ممالک افغانستان کے معاملے پر پوری طرح باخبر ہیں، مجھے 4 ملکی دورے کے دوران قیادت سے ہونیوالی ملاقاتوں میں افغانستان کے حوالے سے ان کا نقطہ نظر جاننے کا موقع ملا۔

انہوں نے کہا کہ ہمسایہ ممالک کی سوچ حقیقت پسندانہ تھی، افغانستان کی صورت حال بگڑتی ہے تو سب متاثر ہونگے، افغانستان میں امن و استحکام ہوتا ہے تو پورا خطہ اس سے مستفید ہوگا، طالبان قیادت کے سب سے رابطے ہیں، افغانستان کے لوگ کئی دہائیوں سے جنگ کا سامنا کر رہے ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ افغانستان کے لوگ امن چاہتے ہیں، ماضی میں ہونیوالی غلطیوں کا خمیازہ بھگت رہے ہیں، ماضی سے ہم سب کو سبق سیکھنا ہے اس کو دہرانا نہیں چاہیے، اگر افغانستان سے مثبت پیغام آ رہا ہے تو اس کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے، ماضی سے ہم سب کو سبق سیکھنا ہے اس کو دہرانا نہیں چاہیے ، افغانستان کواگر تنہا چھوڑا گیا تو اس کا نقصان سب کو ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان کے معاملے میں پاکستان کے مصالحانہ کردار کی تعریف ہوئی، کابل میں جاری انخلاء کے عمل میں پاکستان مختلف ممالک کے سفارتی عملے کو نکالنے میں مدد فراہم کر رہا ہے، پی آئی اے نے اس صورت حال میں اہم کردار ادا کیا، پاکستان پر لوگ اعتماد کا اظہار کر رہے ہیں، پاکستان کا شکریہ ادا کر رہے ہیں۔

وزیر خارجہ کے مطابق اسپائلرز میں بھارت سرفہرست ہے، بھارت پاکستان کونیچا دکھانے کیلئے منفی حرکتیں کر رہا ہے، بھارت نےمختلف گروپس کو دہشت گردی کیلئے جوڑا، بھارت خطے کا امن تباہ کرنے پرتلا ہوا ہے، موجود ہیں، ہمیں محتاط رہنا ہوگا، ہم نے افغانستان کے ساتھ اپنا بارڈر بند نہیں کیا، بارڈر مینجمنٹ کے لیے اقدامات اٹھائے گئے، میری کل برطانیہ کے وزیرخارجہ سے افغانستان کے معاملے پر بات، چیت ہوئی، انہیں پاکستان کو ریڈ لسٹ پر رکھنے کے فیصلے پر نظرثانی کیلئے بھی کہا۔

TALIBAN

SHAH MAHMOOD

Tabool ads will show in this div