سندھ میں 30 اگست سےاسکول کھولنے کا فیصلہ

تعلیمی اداروں میں 80 فیصد ویکسینیشن مکمل ہوگئی
Aug 23, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/08/Sardar-Shah-Pc-New-Khi-23-08.mp4"][/video] Covid Schools

وزیر تعلیم سندھ سردار شاہ نے اعلان کیا ہے کہ سندھ میں ویکسین لگوانے والے والدین کے بچے 30 اگست سے اسکول جاسکتے ہیں۔

پیر کو کراچی میں اسکول ایسوسی ایشن کے اعلیٰ عہدے داران کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے سردار شاہ نے بتایا کہ 30 اگست سے سندھ میں اسکول کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تعلیمی اداروں میں 80 فیصد ویکسینیشن مکمل ہوگئی ہے۔ 100 فیصد ویکسینیشن والے اسکول اگلے پیر سے کھول دئیے جائیں گے تاہم صرف 50 فیصد حاضری کے ساتھ 6 دن اسکول کھولے جائیں گے اور اسکولوں ميں رينڈم پی سی آر ٹيسٹ جاری رہيں گے۔جن بچوں کے والدین کرونا ویکسینیشن کے سرٹیفیکیٹس اسکولوں میں جمع کروائیں گے،صرف ان بچوں کو اسکول آنے کی اجازت ہوگی۔ اسٹاف کی100فيصد ويکسینیشن نہ کرانے والے اسکول بند رہيں گے۔

سردار شاہ نے بتایا کہ محکمہ صحت کی ایڈوائزری تھی کہ اسکول مزید7دن بند رکھنا پڑیں گے۔ وزيراعلیٰ سندھ نے وزیرتعلیم کی سفارش پر اسکول بند رکھنے کا اعلان کيا تھا۔ انھوں نے بتایا کہ ايک ہفتے کے دوران کرونا کی شرح ميں اضافہ ہواہے۔وزيرتعليم سندھ نے واضح کیا کہ پریس کانفرنس میں تمام نمائندہ ايسوسی ايشن ساتھ بيٹھیں۔صوبائی حکومت کوئی ایڈوینچرنہیں کرناچاہتی ہے اوراسکولوں سے متعلق مستقل حل کی طرف جائیں گے۔

مزید پڑھیں:کراچی سمیت سندھ بھر میں تعلیمی ادارے تاحکم ثانی بند

وزیرتعلیم سندھ کا مزید کہنا تھا کہ کرونا کا مستقل حل ويکسینيشن ہے اور ويکسینيشن کے ذريعے کرونا سے جان چھڑائی جاسکتی ہے۔ انھوں نے واضح کیا کہ اسکولوں میں صرف فيسوں کا مسئلہ نہيں بلکہ پوری دنيا ہی پريشان ہے۔ بھارت میں بھی 70 ہفتوں سے زيادہ اسکول بند رہے ہيں اور دنیا کے کئی ممالک میں اسکول اب بھی بند ہیں۔ وزيرتعليم نے مزید کہا کہ دنيا بھر ميں ويکسينيشن کے بعد معمولات زندگی بحال ہورہےہيں کیوں کہ آن لائن تعليم پوری دنيا ميں کامياب نہيں ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل 20 اگست بروز جمعہ وزیراعلیٰ ہاؤس میں اجلاس سے خطاب میں وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے سندھ ميں تعليمی ادارے 30 اگست سے کھولنے کا اعلان کیا تھا تاہم اگلے ہی روز 21 اگست کو کراچی سمیت صوبے بھر میں تعلیمی اداروں کو تاحکم ثانی بند کرنے کا حکم جاری کردیا گیا۔ 

Tabool ads will show in this div