یاسرحسین،عائشہ عمر پاکستان کےبدترین سیریل کلرپربننے والی فلم میں

فلم ریلیز کیلئےانٹرنیشنل اسٹریمنگ سائٹس کوپیش کی جائےگی
Aug 20, 2021

اداکار یاسرحسین اورعائشہ عمرپاکستان کے سب سے بدنام سیریل کلرز میں سے ایک جاوید اقبال پربننے والی فلم میں کام کریں گے جس نے 1999 میں پولیس کے سامنے خود اعتراف جرم کر کے پورے ملک کو ہلا کررکھ دیا تھا۔

سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے فلم کے مصنف اور ہدایتکار ابو علیحہ نے بتایا ، ' ہم اس کہانی کو بہت نازک اندازمیں پیش کر رہے ہیں اور اسکرین پر جاوید کے خوفناک جرائم ایسے انداز میں نہیں دکھانا چاہتے جیسا کہ عام لوگ ان کے بارے میں جانتے ہیں۔ یہ فلم سنسنی کے لیے نہیں ہے' ۔

لاہور سے تعلق رکھنے والے جاوید اقبال نے 30 دسمبر 1999 کو ایک اردو روزنامہ کے دفتر میں جا کر100 لڑکوں کو قتل کرنے کا اعتراف کرتے ہوئے ہتھیار ڈال تھے۔ اس نے اپنے گھناونے جرائم کی تفصیلات حکام کو ثبوتوں سمیت پیش کیں جن میں متاثرین کی تصاویر بھی شامل تھیں۔ تلاشی لینے پراس کے گھر سے بچوں کے کپڑے اور جوتے برآمد ہوئے جبکہ معصوم بچوں کی لاش کو وہ تیزاب کےڈرم میں ٹھکانے لگاتا تھا۔

جاوید اقبال اکتوبر2001 میں جیل میں مردہ پایا گیا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ ' ان ٹولڈ سٹوری آف آ سیریل کلر' میں جاوید اقبال کا کردارانسانی ذہن کی پیچیدگیوں کو تلاش کرے گا ، جس کیلئے حساسیت اور دائرہ کارکے توازن کی ضرورت ہے۔ یہ فلم اس حوالےسے لکھی جانے والی ابوعلیحہ کی اپنی کتاب ' کُکڑی ' پرمبنی ہے جس کے دوسرے حصے کی اشاعت ابھی باقی ہے۔

View this post on Instagram

A post shared by Abu Aleeha (@abualeeha)

ابوعلیحہ کا کہنا ہے کہ یہ کردارادا کرنے کیلئے یاسرحسین ان کا پہلا انتخاب تھے۔

انہوں نے کہا کہ جس کسی نے بھی یاسر کو تھیٹر میں پرفارم کرتے دیکھا ہے وہ جانتا ہے کہ وہ کسی بھی کردار کو اٹھانے کی مکمل صلاحیت رکھتے ہیں اورخاتون کے مرکزی کردار کیلئے ابوعلیحہ کو ایک کمرشل ایکٹرس کی ضرورت تھی جس کے گلیمرس امیج کو مکمل طور پرتبدیل کیا جاسکتا۔

ابوعلیحہ کے مطابق ' عائشہ عمرنے یہ کردارنبھانے کیلئے جتنی کوشش کی ہے وہ ناظرین کوحیران کر دے گی۔ مجھے خوشی ہے کہ وہ اس منصوبے کا حصہ ہیں ' ۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ فلم کی پروڈکشن نیٹ فلکس، زی 5 اور امیزون جیسے انٹرنیشنل اسٹریمنگ پلیٹ فارمز کی جانب سے مقررکردہ تقاضوں پرپورا اترتی ہے اس لیے ان اسٹریمنگ سائٹس کو یہ فلم ریلیز کرنے کیلئے پیشکش کی جائے گی۔

امکان ہے کہ فلم کی شوٹنگ نومبر2021 سے پہلے مکمل کرلی جائے گی جبکہ ریلیز کی حتمی تاریخ کا اعلان سینما گھر دوبارہ کھلنے پر کیا جائے گا۔

فلم جاوید احمد کاکے پوتو کی پروڈکشن میں ' کے کے فلمز' کے بینرتلے بنائی جارہی ہے جس کی کاسٹ میں یاسر اورعائشہ کے علاوہ پارس مسرور، رابعہ کلثوم اور تھیٹروٹی وی کے دیگر اداکارشامل ہیں۔

لکھاری اور ہدایتکارابوعلیحہ اس سے قبل ونس اپان آ ٹائم ان کراچی، لاک ڈاؤن، شینوگئی اور ادھم پٹخ جیسی فلمیں بناچکے ہیں جو کرونا کے باعث بند سینما گھرکھلنے کے بعد ریلیزکی جائیں گی۔

شینوگئی لاہورموٹروے پرخاتون سے زیادتی کے واقعہ کے بعد عوامی ردعمل سے متاثرہوکربنائی گئی ہے۔

ayesha omar

Yasir Hussain

Tabool ads will show in this div