پاکستان میں یوم عاشور کے جلوس اختتام پذیر

کئی علاقوں میں موبائل سروس بحال

ملک بھر میں یوم عاشورہ 10 محرم الحرام مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا۔ ہر بڑے اور چھوٹے شہر میں ماتمی جلوس نکالے گئے۔

ملک کے مختلف علاقوں میں سخت سیکیورٹی میں ماتمی جلوس نکالے گئے جس میں عزاداران ماتم اور نوحہ خوانی کرتے ہوئے شہدائے کربلا پر ڈھائے گئے مظالم کو یاد کیا۔

کراچی، اسلام آباد، لاہور اور کوئٹہ سمیت متعدد شہروں میں جلوس کی گزرگاہوں میں موبائل فون سروس بند ہو گی اور موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر بھی پابندی عائد تھی۔

کراچی میں 10 محرم الحرام عاشورہ کی مرکزی مجلس کے بعد جلوس نشتر پارک سے برآمد ہوا۔ جلوس اپنے مقررہ راستوں نمائش چورنگی، سی بریز، ایمپریس مارکیٹ، ریگل چوک، تبت سینٹر، ریڈیو پاکستان، بولٹن مارکیٹ، لائٹ ہاوس کھارادر سے ہوتا ہوا حسینیہ ایرانیاں پر اختتام پذیر ہوا۔

لاہور میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس نثار حویلی اندرون موچی گیٹ سے برآمد ہوا اور اپنے روایتی راستوں سے ہوتا ہوا کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوا۔

پشاور، ملتان، حیدر آباد، سکھر، بنوں اور دیگر شہروں میں بھی محرم الحرام کے جلوس روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے اختتام پذیر ہوگئے۔

یوم عاشور پر سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئےتھے جبکہ کئی شہروں میں موبائل سروس بھی معطل رہی۔

Muharam ul Haram

Tabool ads will show in this div