افغان کرنسی ویلیو بہتری کی جانب گامزن

Afghan currency gets stronger
Aug 17, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/08/Afghan-Currency-Demand-KHI-PKG-17-08-Umair.mp4"][/video]

افغانستان ميں غير يقينی صورتحال کے بعد مارکيٹ ميں افغان کرنسی نوے پيسے تک گرگئی تھی لیکن کابل پر طالبان کے پرامن ٹیک اوور اور عام معافی کے اعلان نے افغانی کرنسی کی گرتی قدر کو سنبھال لیا۔ چیئرمین فاریکس ڈیلرز ایسوسی ایشن ملک بوستان کا کہنا ہے کہ افغانستان سے پاکستان میں روزانہ 25 سے 30 ہزار افراد آتے جاتے ہیں جو اپنی ضرورت کے مطابق ڈالر، افغان کرنسی اور پاکستانی روپیہ ساتھ رکھتے ہيں۔ ملک بوستان کا کہنا ہے کہ افغان صوبے مزار شریف پر طالبان کے کنٹرول کے بعد افغان کرنسی کا لين دين روک گيا تھا تاہم افغانستان کی موجودہ صورتحال میں افغانی کرنسی کی مانگ بڑھ سکتی ہے۔ پرامن ٹیک اوور،عام معافی کا اعلان کام کرگیا

Tabool ads will show in this div