نیشنل ایکشن پلان پرعمل نہ کرنے سے دہشتگردی کے واقعات ہونگے،بلاول

افغان بھائیوں سے اظہار یکجہتی کرتےہیں

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ حکومت نیشنل ایکشن پلان پرعمل نہیں کرے گی تو دہشت گردی کے واقعات ہوں گے۔

کراچی میں منگل کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے چئیرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ افغان عوام نسلوں سے مشکلات کا سامنا کرتے آئے ہیں اور اس صورتحال میں افغان بھائیوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہیں۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ ملک میں نیشنل ایکشن پلان پر پورا عمل کیا جائے اور حکومت دہشت گردی پر کوئی سمجھوتہ نہ کرے۔ بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ سی پیک جیسے منصوبوں کی سیکیورٹی پر بھی نظرثانی کی جائے کیوں کہ ہمارے ملک میں ایسے گروپ ایکٹو ہیں جنھوں نے دہشت گردی کی۔ افغانستان کی صورتحال پر حکومت پالیسی واضح کرے اور حکومت تمام معاملات میں پارلیمان کو اعتماد میں لے۔

بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ  افغانستان کی صورتحال پورے خطے کا معاملہ ہے۔ افغانستان میں ایسا سیٹ اپ ضروری ہے جس میں تمام گروہوں کی نمائندگی ہو۔ پاکستان کو اپنے استحکام کی حفاظت کرنا ہوگی۔ پاکستان کی جانب سے سرحد پر باڑ لگانے کا فیصلہ خوش آئند تھا۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ افغانستان سے مہاجرین کے آنے کی صورت میں خطرات ہونگے۔ ریاست پاکستان کو آئینی اور قانونی تقاضے پورے کرنے پڑینگے۔ پاکستان کے لیے خطرات موجود ہیں اور ابھی تک افغانستان کی صورتحال پل پل بدل رہی ہے تاہم پاکستان کی عوام دہشت گردی کو مسترد کرتے ہیں۔

BILAWAL BHUTTO

Tabool ads will show in this div