کراچی پولیس نےدہشت گردی کی کارروائی ناکام بنا دی

دہشت گرد کو ساتھی سمیت گرفتار کرلیا

یوم آزادی کے موقع پر کراچی میں دہشت گردی کی کارروائی ناکام بنادی گئی۔

ملیر پولیس اور وفاقی انٹیلیجنس ایجنسی نے سومارجوکھیو گوٹھ، گلشن حدید میں مشترکہ کارروائی کی اور سندھ ریویلیوشن آرمی سے تعلق رکھنے والےدہشت گرد کو ساتھی سمیت گرفتار کرلیا۔گرفتار دہشت گردوں سے 2 دستی بم برآمد کرلئے گئے۔پولیس نے بتایا ہے کہ سندھ ریویلیوشن آرمی کے دہشت گردوں نےگزشتہ برس بھی  گلشن حدید میں آزادی اسٹال پر دستی بم  پھینکا تھا۔

کالعدم تنظیم کیجانب سے اس سال بھی آزادی اسٹال پر حملے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی۔گرفتار دہشت گرد اکرم چانڈیو پھچلے برس ہونے والی دہشت گرد کارروائیوں میں سندھ ریویلیوشن آرمی کا سہولت کار تھا۔

گرفتار ملزم نے فروری 2020 میں جوگی موڑ پر سب انسپکٹر عامر ریاض پر حملے میں بھی سہولت کاری کا اعتراف کیا۔گرفتار دہشت گرد شیرازبیرون ملک موجود سندھ ریویلیوشن آرمی کےدہشت گروں اور جیل میں قید ساتھیوں کے درمیان پیغام رسانی کا کام کرتا تھا۔

دونوں دہشت گرد ملزمان جاوید منگریو، سہیل میرانی، سجاد شر، ساجد سنجرانی اور دین محمد قریشی کے قریبی ساتھی ہیں۔گرفتار دہشت گردوں نے کالعدم تنظیم کیلئے فنڈنگ کرنے کا بھی اعتراف کیا۔اکرام چانڈیو اور شیراز سومرو سے مزید پوچھ گچھ جاری ہے۔

Tabool ads will show in this div