لاہور ہائیکورٹ نے شوگر ملز کیخلاف تادیبی کارروائی سےروک دیا

پنجاب حکومت سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری
Aug 10, 2021
فائل فوٹو
فائل فوٹو
پنجاب حکومت سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری
پنجاب حکومت سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری
LHC

لاہور ہائیکورٹ نے متعلقہ اداروں کو مشروط طور پر جہانگیر ترین کی شوگر ملز کے خلاف آئندہ سماعت تک تادیبی کارروائی سے روک دیا۔

منگل 10اگست کو جسٹس رسال حسن سید نے جے ڈی ڈبلیو اور جے کے شوگر ملز کی جانب سے دائر ایکس مل ریٹ مقرر کرنے کے خلاف درخواستوں پر سماعت کی۔

عدالت نے شوگر ملز کو چینی کی قیمت میں فرق کے برابر مچلکے کین کمشنر کو جمع کروانے کی ہدایت کی۔

ہائیکورٹ نے تمام درخواستیں یکجا کرکے مرکزی کیس کے ساتھ سماعت کے لیے مقرر کرنے اور کین کمشنر کو شوگر ملز کی چینی کی سپلائی کا ریکارڈ مکمل رکھنے کا حکم دیا۔

عدالت نے پنجاب حکومت سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب بھی کر لیا ہے۔

شوگر ملوں کے شئیر ہولڈر علی خان ترین اور مقصود احمد ملہی کی جانب سے ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی جس میں وفاقی و صوبائی حکومت سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا۔

وکیل درخواست گزار نے مؤقف اپنایا کہ ہائیکورٹ نے چینی کا ریٹ مختص کرنے سے قبل شوگر ملز مالکان کا موقف سننے کا حکم دیا تھا لیکن عدالتی حکم کے باوجود درخواست گزاروں کو سنا ہی نہیں گیا۔

درخواست گزار کے مطابق چینی کی نئی قیمت 89.50روپے مقرر کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا جس پر چینی فروخت کرنا ممکن نہیں۔

استدعا کی گئی ہے کہ درخواست کے حتمی فیصلے تک چینی کی نئی قیمت مقرر کرنے کے نوٹیفکیشن پر عمل درآمد روکا جائے۔

JAHANGIR TAREEN

sugar mills

Tabool ads will show in this div