امیدہے کہ مرتضیٰ وہاب اختیارات کارونا نہیں روئیں گے، علماء

وسائل کی نہیں مسائل کی بات ہوگی، مرتضیٰ وہاب
Aug 09, 2021

علمائے کرام کا کہنا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب کے ساتھ حکومت ہے، امید ہے وہ اختیارات نہ ہونے کا رونا نہیں روئیں گے۔ ایڈمنسٹریٹر کراچی کا کہنا ہے کہ اب وسائل کی بات نہیں کی جائے گی، مسائل حل کرنے کی بات کریں گے۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی، مشیر قانون و ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضیٰ  وہاب کی زیر صدارت کے ایم سی بلڈنگ میں محرم الحرام کے انتظامات کے حوالے سے علماء کے ساتھ اجلاس ہوا، جس میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے علمائے کرام نے شرکت کی۔

اجلاس میں ایڈشنل آئی جی کراچی، ڈی آئی جی ساؤتھ، ڈی آئی جی ٹریفک، ڈپٹی کمشنرز، میونسپل کمشنرز اور کے ایم سی کے افسران بھی شریک ہوئے۔

علمائے کرائم نے شہر قائد کے مسائل سے متعلق کھل کر بات کی، حکومت اور انتظامیہ سے اپنی شکایات بھی ایڈمنسٹریٹر کراچی کے گوش گزار کیں۔

مولانا اکبر درس کا کہنا تھا کہ بلدیاتی ادارے جان بوجھ کر کام نہیں کرتے، اسٹریٹ لائٹس اور شاہراہوں کی مرمت کا بہت کام ہے۔

مفتی محمد عابد مبارک نے کہا کہ ہر سال یہ رونا سنتے تھے کہ میرے پاس اختیار نہیں، مرتضیٰ وہاب کے ساتھ حکومت ہے، اُمید وہ اختیار نہ ہونے کا رونا نہیں روئیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ تمام مسالک کے درمیان مکمل ہم آہنگی پائی جاتی ہے، کنٹینرز اس طرح نہ لگائے جائیں کہ عوام کیلئے مسائل بڑھ جائیں۔

سید ندیم حسین نقوی نے کہا کہ شہر قائد کے مسائل کا مستقل حل چاہتے ہیں، ڈسٹرکٹ ایسٹ اور ملیر کے علاوہ پورا شہر کچرے کے ڈھیر میں تبدیل ہوچکا ہے۔

دعوت اسلامی سے تعلق رکھنے والے محمد یعقوب عطاری نے مسائل کے حل اور شجر کاری مہم میں مدد کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کسی کی دل آزاری نہیں چاہتے۔

سید مسرور ہاشمی کا کہنا تھا کہ ضلعی وسطی میں سب  سے زیادہ مسائل ہیں۔

جماعت اہلسنت سے جمیل راٹھور نے ایڈمنسٹریٹر کراچی سے کہا کہ مرتضیٰ وہاب اگر پیپلز پارٹی آپ کی حمایت کرتی ہے تو ٹھیک ہے، اگر انہوں نے سپورٹ نہیں کیا تو آپ کی نیک نامی متاثر ہوسکتی ہے، ایسا کوئی مطالبہ نہیں کرنا چاہتے جو کراچی والوں کیلئے اتنا ہی دور ہو جتنا چاند۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں پتھارے داروں کا قبضہ ہوچکا ہے، مساجد اور امام بارگاہوں کی گزرگاہوں کو کھولا جائے، کراچی کو سانس لینے دیں، بلدیہ کے اسپتال قبرستان کا منظر پیش کررہے ہیں، محرم کے مہینے میں ہورڈنگ لگ رہی ہیں، کراچی اس وقت یتیم ہے، اس شہر پر شفقت کا ہاتھ رکھنے کی ضرورت ہے۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے علمائے کرائم کی تمام باتیں سنیں، انسان غلطی سے سیکھتا ہے،  علماء مشعل راہ ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ اب وسائل کی بات نہیں کی جائے گی، مسائل حل کرنے کی بات کریں گے، آج کے اجلاس میں کراچی کے تمام اداروں کی نمائندگی تھی، کراچی والوں کے مسائل اب حل ہوں گے۔

انہوں نے بتایا کہ محرم الحرام کے 10 روز کیلئے 1339 کنٹرول روم بنالیا ہے، کراچی کے ان تمام مقامات پر خود جاؤں گا جہاں سے جلوس گزرتا ہے، کراچی کا مسئلہ ہو یا پورے سندھ کا ہم اس کو حل کریں گے۔

ADMINISTRATOR KARACHI MURTAZA WAHAB

Tabool ads will show in this div